اڑھائی سالہ زینب واقعہ پر پوری قوم افسردہ ہے، ثناء اللہ عباسی 

اڑھائی سالہ زینب واقعہ پر پوری قوم افسردہ ہے، ثناء اللہ عباسی 

  

چارسدہ(ڈسٹرکٹ رپورٹر) آئی جی خیبر پختونخوا ثناء اللہ عباسی نے کہا ہے کہ ڈھائی سالہ زینب واقعہ پر پوری قوم افسردہ ہے۔ زینب کا اغواء اور بہیمانہ قتل ایک اندھا کیس ہے جسے جدید طریقہ تفتیش سے ملزمان تک پہنچا جائے گا۔گزشتہ نو ماہ کے دوران بچوں سے جنسی زیادتی میں ملوث نو سو سے زیادہ ملزمان کوگرفتار کیا جا چکا ہے۔بچی قتل کیس کے ملزمان کی گرفتاری کے لئے چارسدہ پشاور پولیس مشترکہ کاروائیاں عمل میں لائی گی۔ا س حوالے سے ڈسڑکٹ پولیس آفس میں ڈی ائی جی مردان شیر اکبر خان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے آئی جی خیبر پختونخوا ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی کا کہنا تھا کہ زینب واقعہ پر پوری قوم افسردہ ہے، پولیس کی جانب سے ملزمان کی گرفتاری کے لئے ایس پی درویش خان کی سربراہی میں ا نکوائری ٹیم مقرر کی گئی ہے جنہیں واقعہ کے حوالے سے کچھ شواہد بھی ملے ہیں جس پر تفتیش کا دائرہ مزید وسیع کیا جائے گا۔اس حوالے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ بچے کے ڈی این اے رپورٹ آنے میں کچھ وقت لگے گا۔کیونکہ پولیس کو  ہسپتال سے ابھی تک تفصیلی میڈیکل رپورٹ موصول نہیں ہوئی جیسے ہی پولیس کو میڈیکل رپورٹ موصول ہوگی اس حوالے سے میڈیا کو آگاہ کیا جائے گا جبکہ موجودہ صورتحال میں ہسپتال کے ڈاکٹروں نے زبانی طور پر بچی کے ساتھ جنسی زیادتی کی تصدیق کی ہے۔اس حوالے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ گزشتہ نو ماہ کے دوران خیبر پختونخواہ میں ابھی تک جنسی زیادتی میں ملوث تین سو ملزمان گرفتار کی جا چکے ہیں اور انشاء اللہ بہت جلد زینب اغوا ء و قتل کیس میں ملوث ملزمان کو گرفتار کیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ اول -