جامعہ کراچی کی طالبہ کو ہراساں کرنے کا معاملہ، تمام چھ لڑکے اب کہاں ہیں ؟ تفصیلات سامنے آ گئیں 

جامعہ کراچی کی طالبہ کو ہراساں کرنے کا معاملہ، تمام چھ لڑکے اب کہاں ہیں ؟ ...
جامعہ کراچی کی طالبہ کو ہراساں کرنے کا معاملہ، تمام چھ لڑکے اب کہاں ہیں ؟ تفصیلات سامنے آ گئیں 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )جامعہ کراچی میں طالبہ کو ہراساں کرنے کے الزام میں گرفتار 6 لڑکوں کی ضمانت منظور کر لی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ رات جامعہ کراچی میں طالبہ کو حراساں کرنے کے الزام میں چھ نوجوانوں کو گرفتار کرتے ہوئے مقدمہ درج کیا گیا تھا تاہم آج انہیں عدالت میں پیش کیا گیا ۔ عدالت نے تمام لڑکوں کی ضمانت منظور کر لی ہے ،وکیل صفائی نے عدالت میں دلائل دیتے ہوئے کہا کہ یہ ایف آئی آر نہیں بنتی کیونکہ ہاسٹلز رات سات بجے بند ہو جاتے ہیں ،لڑکوں کی عمریں بھی کم ہیں ۔ ملزمان میں فیضان ، حمادعلی ، زوار ، عبدالرحمان ، عمیر اور ذاکر شامل ہیں ۔

یاد رہے کہ انسٹی ٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن (آئی بی اے) کے جامعہ کراچی میں واقع مین کیمپس کے طالب علم شہیرکا الزام ہے کہ جامعہ کراچی میں رہائش پذیر نوجوانوں نے اسے اور اس کے ساتھ موجود طالبات کو ہراساں کیا اور اس پر حملہ کیا۔پولیس نے متاثرہ نوجوان شہیرکا بیان قلمبندکرلیا ہے، نوجوان کا کہنا ہے کہ وہ دو ساتھی طالبات کو ہاسٹل ڈراپ کرنے آیا تھا، نوجوانوں نے واپسی پر اسے ہراساں کیا۔پولیس نے 6 نوجوانوں کو گرفتارکرکے شہیر کی مدعیت میں مبینہ ٹاو¿ن تھانے میں مقدمہ درج کرلیا ،مقدمے میں ہراسانی، راستہ روکنے اور گالم گلوچ سمیت دیگر دفعات شامل کی گئی ہیں۔

 گرفتار لڑکوں کی عمریں 16 سے 21 سال کے درمیان ہیں،گرفتارہونے والے ایک ملزم عبدالرحمان نے واقعہ سے لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -