کورونا وائرس کے باعث معطل قومی ویمن فٹ بال کی سرگرمیاں بھی بحال ہو گئیں

کورونا وائرس کے باعث معطل قومی ویمن فٹ بال کی سرگرمیاں بھی بحال ہو گئیں
کورونا وائرس کے باعث معطل قومی ویمن فٹ بال کی سرگرمیاں بھی بحال ہو گئیں

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان فٹ بال فیڈریشن (پی ایف ایف) نے ملک میں خواتین فٹ بال کی سرگرمیاں بحال کرتے ہوئے قومی ویمن فٹ بال ٹیم کی از سر نو تشکیل کیلئے 30 کھلاڑیوں کو کیمپ میں لاہور طلب کر لیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں ویمن فٹ بال کی سرگرمیا ں جنوری 2020ءسے معطل ہیں اور خواتین فٹ بالرز قومی ویمن فٹ بال چیمپئن شپ کے بعد سے ایکشن سے باہر ہیں جس کی ایک وجہ کورونا وائرس ہے تاہم اب پی ایف ایف نے خواتین فٹ بالرز کو ایک بار پھر متحرک کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ذرائع کے مطابق پی ایف ایف نے قومی ویمن فٹ بالرز کیلئے 26 اکتوبر سے یکم نومبر تک لاہور میں کیمپ لگانے کا فیصلہ کیا ہے جس میں 30 کھلاڑیوں کو مدعو کیا گیا ہے۔ کیمپ کی نگرانی پی ایف ایف کے ڈائریکٹر ٹیکنیکل ڈینیئل لمونیس کریں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ کیمپ کے بعد خواتین فٹ بال لیگ کا بھی انعقاد ہوگا اور ان دونوں ایونٹس سے قومی ویمن ٹیم کی تشکیل نو کی جائے گی تاکہ مستقبل کے ایونٹس پلان ہو سکیں۔

جن 30 کھلاڑیوں کو کیمپ میں طلب کیا گیا ہے ان میں تجربہ کار ہاجرہ خان کے علاوہ ذوالفیا نذیر ، کرن قریشی، سحر زمان، مشعل، عالیہ علاو¿الدین، داہلیہ فاروق، فاطمہ بلوچ، نینا زہری، علیزہ، ایشل، خدیجہ کاظمی، نشا، رامین، روبینہ، بی بی عزیز، غزالہ عامر، کافیہ کریم، سارہ خان، شاہدہ امین، عالیہ صادق، عاصمہ عثمان، دعا گیلانی، ماریہ جمیلہ، مہناز شاہ، رافعہ پروین، شمائلہ ستار، فاطمہ انصاری اور ابیحہ حیدر شامل ہیں۔

مزید :

کھیل -