ن لیگ کے باغی ارکان مشکلات کا شکار، فیصل نیازی سے استعفیٰ لکھوالیا، جلیل شرقپوری، مولانا غیاث الدین کو پنجاب اسمبلی میں داخلے سے روک دیا گیا

ن لیگ کے باغی ارکان مشکلات کا شکار، فیصل نیازی سے استعفیٰ لکھوالیا، جلیل ...
ن لیگ کے باغی ارکان مشکلات کا شکار، فیصل نیازی سے استعفیٰ لکھوالیا، جلیل شرقپوری، مولانا غیاث الدین کو پنجاب اسمبلی میں داخلے سے روک دیا گیا
کیپشن:    سورس:   Twitter

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب اسمبلی کے اجلاس کے جمعہ کے روز ہونے والے اجلاس میں مسلم لیگ ن کے باغی ارکان سخت مشکلات کا شکار نظر آئے۔ لیگی اراکین اسمبلی نے فیصل نیازی سے استعفیٰ لے لیا جبکہ جلیل شرقپوری اور مولانا غیاث الدین کو ایوان میں داخلے سے روک دیا۔

پنجاب اسمبلی کے اجلاس سے پہلے مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں شرکت کیلئے مسلم لیگ ن کے باغی ارکان بھی پہنچے۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب سے ملاقات کرنے والے رکن پنجاب اسمبلی فیصل نیازی سے استعفیٰ لے لیا گیا، ان سے اپوزیشن لیڈر کے چیمبر میں استعفیٰ لکھوایا گیا۔ ن لیگ پنجاب کی ترجمان عظمیٰ بخاری نے تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ فیصل نیازی نے ن لیگ کی بنیادی رکنیت سے استعفیٰ دیا ہے۔

اجلاس میں شرکت کیلئے جلیل شرقپوری آئے تو انہیں سب سے زیادہ بد سلوکی کا سامنا کرنا پڑا۔ لیگی ارکان نے ایوان کے باہر ہی ان کا راستہ روک لیا اور نہ صرف ان کے خلاف نعرے بازی کرتے رہے بلکہ ان کے سر پر لوٹا رکھنے کی بھی کوشش کی۔ لیگی ارکان ان سے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے رہے۔

ایک اور باغی رکن مولانا غیاث الدین اپوزیشن چیمبر میں جانے لگے تو رانا اقبال اور بلال یاسین سمیت دیگر لیگی ارکان نے انہیں اندر جانے سے روک دیا۔ اس موقع پر بحث بھی ہوئی تاہم معاملہ اس حد تک پہنچ گیا کہ مولانا غیاث الدین نے دوبارہ ن لیگ کا ٹکٹ نہ لینے کا کہہ دیا۔ بعد ازاں وہ ایوان میں گئے تو مسلم لیگ ن کے چیف وہپ خلیل طاہر سندھو نے انہیں ایوان میں بیٹھنے سے روک دیا۔

خیال رہے کہ یہ وہ اراکین ہیں جنہوں نے کچھ ماہ پہلے وزیر اعلیٰ پنجاب سے ملاقات کی تھی۔ اس پر انہیں پارٹی کے اندر سے سخت تنقید کا سامنا تھا۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -علاقائی -پنجاب -لاہور -