پاکستان میں جمہوریت ناتواں ہے اس کیلئے آواز بلند اور جمہوری مشعل کو روشن رکھیں گے ،پرویز رشید

پاکستان میں جمہوریت ناتواں ہے اس کیلئے آواز بلند اور جمہوری مشعل کو روشن ...

                               اسلام آباد (آئی این پی))وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید نے کہاہے کہ میڈیا پر حملوں کے حوالے سے حکومت کو جدا نہیں پائیں گے ،ہم سے کچھ کمزوریاں ضرور ہوئی ہیں لیکن کوتاہیاں نہیں ¾ پاکستان میں جمہوریت ناتواں ہے اس کےلئے آواز بلند کر نا اور جمہوری مشعل کو روشن رکھیں گے، طاقت کے بل بوتے پر غلیلوں والوں نے اسلام آباد پر غلیل بازی کے ذریعے پتھراﺅ شروع کیا دفاتر کے شیشے توڑے ¾ صحافیوں کے سر پھاڑے اور عمارتوں پر قبضہ کیا یہ سب حکومت نے اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے جبکہ طاقت کو طاقت کے ذریعے کچلا جاسکتا تھالیکن حکومت نے دل پر پتھر رکھ کر احتجاج کر نے کی اجازت دی، حکومت کی کوشش ہے کہ مذاکرات کے ذریعے دھرنوں والوں کو سمجھا بجھا کر اس اذیت سے نکالا جاسکے اور ہمیں یقین ہے کہ ہم کامیابی سے منطقی انجام تک پہنچ جائینگے، صحافیوں کی لائف انشورنس کی حکومت نے منظوری دیدی ہے جبکہ میڈیا اگر دھرنے دینے والوں کی لائیو کوریج نہ کر تا تو دھرنے میں شرکت کر نے والے 200لوگ بھی کی جانے والی تقریروں سے تنگ آ کر بھاگ جاتے ۔پیر کو پارلیمنٹ ہاﺅس پریس لاﺅنج میںمیڈیا پر ہونے والے حملوں کے خلاف واک آﺅٹ کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اطلاعات نے کہاکہ اس وقت پاکستان کا ہر شہری انتہائی اذیت سے دو چار ہے اور میڈیا کو بھی اپنے فرائض کی ادائیگی میں مشکلات کا سامناکر نا پڑ رہا ہے۔ میڈیا اپنے فرائض کی ادائیگی کےلئے فرنٹ لائن پر موجود ہوتا ہے اور طاقت کے استعمال سے میڈیا کو اس کی ذمہ داریاں ادا کر نے سے روکنے کی کوششیں کی جارہی ہیں انہوںنے کہاکہ ایک ٹی وی چینل پر جب حملہ ہواتو میں بھی وہاں موجود تھا اور مجھے محسوس ہوا کہ وہ پتھراﺅ میرے استقبال کےلئے کیا گیا جبکہ اصول پرستی کی سزا میڈیا اور دیگر جماعتوں کے لوگوں کو دی جارہی ہے۔ وزیر اطلاعات نے کہاکہ اس فسطائیت ہے جو پاکستان کے سماج اور سوسائٹی کو کنٹرول کر نا چاہتی ہے کہ صرف ان کی آواز اور بات کو سچ سمجھا جائے اور ان کی منشاء کے خلاف کسی بات کو بھی رد کر دیا جائے اب یہ مشترکہ مقصد بن گیا ہے کہ حکومت اور میڈیا ایک دوسرے کاہاتھ تھام لیں جبکہ جو ان اصولوں کو نہیں مانتے وہ ایک دوسروں کے ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کر ایک کنٹینر پراکھٹے ہوئے گئے ہیں انہوںنے کہاکہ میڈیا پر حملوں کے حوالے سے حکومت کو جدا نہیں پائیں گے ہم سے کچھ کمزوریاں ضرور ہوئی ہیں لیکن کوتاہیاں نہیں ¾ پاکستان میں جمہوریت ناتواں ہے اس کےلئے آواز بلند کر نا اور جمہوری مشعل کو روشن رکھیں گے جبکہ اس کے خلاف چلنے والی تندو تیز ہوائیں ضرور ہیں لیکن اتنی تیز نہیں کہ اس شمع کو کوئی گل کر سکے ۔انہوںنے کہاکہ طاقت کے بل بوتے پر غلیلوں والوں نے اسلام آباد پر غلیل بازی کے ذریعے پتھراﺅ شروع کیا دفاتر کے شیشے توڑے ¾ صحافیوں کے سر پھاڑے اور عمارتوں پر قبضہ کیا یہ سب حکومت نے اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے جبکہ طاقت کو طاقت کے ذریعے کچلا جاسکتا تھالیکن حکومت نے دل پر پتھر رکھ کر احتجاج کر نے کی اجازت دی اور ہمیں معلوم تھا کہ یہ احتجاج کی آڑ میں انتشار کر نے والے ہیں اور دوسرے کو کچلنے والے ہیں جس کا خمیازہ ہم بھگت رہے ہیں وزیر اطلاعات نے کہاکہ حکومت کی طرف سے یقین دلاتے ہیں کہ جو بھی اس لاقانونیت کے مرتکب ہورہے ہیں انہیں قانون کے حوالے کیا جائیگا جبکہ میڈیا کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے جسے پورا کیا جائے پرویز رشید نے کہاکہ حکومت کی کوشش ہے کہ مذاکرات کے ذریعے دھرنوں والوں کو سمجھا بجھا کر اس اذیت سے نکالا جاسکے اور ہمیں یقین ہے کہ ہم کامیابی سے منطقی انجام تک پہنچ جائینگے۔حکومت کی طرح میڈیا بھی موجودہ صورتحال میں صبر و تحمل کامظاہرہ کرے ¾ میڈیا ہمارا ساتھ دے اور یہ وقت گزر بھی جائیگا جبکہ جنہوںنے میڈیا پر حملے کئے انہیں قانون کے حوالے کیا جائےگا وزیر اطلاعات پرویز رشید نے کہاکہ خواہ کوئی بھی میڈیا گروپ ہو جو حکومت پر تنقید کرے ہم اس کا بھی تحفظ کرینگے جبکہ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات و نشریات سے درخواست ہے کہ وہ میڈیا کے ایک وفد سے ملے تاکہ پارلیمنٹ کی حدود کے حوالے سے جو بھی تحفظات ہیں اس کا ازالہ کیا جائیگا

مزید : صفحہ اول