نیول ڈاکیارڈ پرحملے میں اے آئی جی سندھ کا بیٹا بھی ملوث ہے: کراچی پولیس چیف

نیول ڈاکیارڈ پرحملے میں اے آئی جی سندھ کا بیٹا بھی ملوث ہے: کراچی پولیس چیف
نیول ڈاکیارڈ پرحملے میں اے آئی جی سندھ کا بیٹا بھی ملوث ہے: کراچی پولیس چیف

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک )شہر قائد کی پولیس کے سربراہ اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل غلام قادر تھیبو نے انکشاف کیا ہے کہ چند روز قبل پاک بحریہ کے ڈاکیارڈ پر حملے میں اے آئی جی سندھ شیر جاکھرانی کا بیٹا اویس جاکھرانی بھی ملوث تھا۔تفصیلات کے مطابق اے آئی جی غلام قادر تھیبو کا کہنا ہے کہ ڈاکس تھانے کی حدود سے ملنے والی لاش نیوی ڈاکیارڈ پرحملہ کرنیوالے دہشت گرد کی ہے، چند روز قبل پاک بحریہ کے ڈاکیارڈ پر جو حملہ کیا گیا اس میں ہلاک ہونے والا ملزم اویس جاکھرانی اسسٹنٹ ٹو آئی جی شیر جاکھرانی کا بیٹا ہے، اویس جاکھرانی نے 4 ماہ قبل پاکستان نیوی کی ملازمت چھوڑ د ی تھی، شواہدسے لگتاہے کہ اویس جاکھرانی نے ساتھیوں کے ہمراڈاکیارڈ پرحملہ کیا اور کارروائی کے دوران وہ گولیاں لگنے سے ہلاک ہوا، 3 پولیس افسران نے اویس جاکھرانی کی لاش وصول کر لی ہے ۔واضح رہے کہ پاک بحریہ کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ 6ستمبر کی شب نامعلوم حملہ آوروں نے جدید اسلحہ سے لیس ہو کر نیوی ڈاکیارڈ پر حملہ کیا اور ڈاکیارڈ میں داخلے کی کوشش کرتے ہوئے شدید فائرنگ کی، دوطرفہ فائرنگ کے تبادلے میں 2 حملہ آور ہلاک جب کہ 4 دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے ۔ دہشت گردوں کا مقابلہ کرتے ہوئے پاکستان بحریہ کے ایک پیٹی افسر شہید جب کہ 6 جوان زخمی بھی ہوگئے تھے ۔

مزید : کراچی /اہم خبریں