چینی سرمایہ کاری قرضہ نہیں، عمران خان نے قبل از مرگ واویلا شروع کیا، نیپرا خودمختار ادارہ ہے: خواجہ آصف

چینی سرمایہ کاری قرضہ نہیں، عمران خان نے قبل از مرگ واویلا شروع کیا، نیپرا ...
چینی سرمایہ کاری قرضہ نہیں، عمران خان نے قبل از مرگ واویلا شروع کیا، نیپرا خودمختار ادارہ ہے: خواجہ آصف

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ چین کی طرف سے کی جانے والی سرمایہ کاری قرض نہیں ہے، عمران الزامات لگانے سے پہلے اپنے اردگرد ماہرین سے مشورہ کر لیا کریں، انہوں نے قبل از مرگ واویلا شروع کر رکھا ہے۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ چین کی طرف سے پاکستان میں براہ راست سرمایہ کاری کی جانی تھی اور چینی صدر کا دورہ 34 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کیلئے تھا، چینی بنک نے باہمی تعلقات کی وجہ سے پاکستان کو زیادہ رقم دی اور پاکستان میں نجی سرمایہ کاری پر کمرشل قرضے بھی جاری کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے قبل از مرگ واویلا شروع کر دیا ہے، گڈانی بجلی گھروں کیلئے پہلے ہی اشتہارات دیئے تھے اور اس کے علاوہ تمام منصوبوں کیلئے اشتہارات دیئے گئے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ نیپرا کے موجودہ چیئرمین کا تعلق سندھ سے ہے اور اس میں چاروں صوبوں کی نمائندگی موجود ہے، حکومت نے نیپرا قوانین میں کوئی تبدیلی نہیں کی اور نہ ہی کسی قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔ نیپرا خودمختار ادارہ ہے جس میں تمام فیصلے مشاورت کے ساتھ ہوتے ہیں، نیپرا سے اکثر حکومت کو بھی گلہ رہتا ہے۔

 خواجہ آصف نے کہا کہ بجلی کی پیداوار کیلئے چین کا کوئلہ استعمال نہیں ہو گا اور تھر میں دو منصوبے شروع کئے جائیں گے جس میں وہیں کا کوئلہ استعمال ہو گا تاہم پنجاب میں پراجیکٹ کیلئے کوئلہ درآمد کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب شروع ہونے والے پراجیکٹ کیلئے شفاف طریقے سے کوئلہ درآمد کیا جائے گا ۔

مزید : قومی /اہم خبریں