چیف جسٹس نے کرپشن کی رقم کی رضا کارانہ واپسی کا از خود نوٹس لے لیا

چیف جسٹس نے کرپشن کی رقم کی رضا کارانہ واپسی کا از خود نوٹس لے لیا

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے نیب کی جانب کرپٹ عناصر سے کرپشن کی رقم کی رضا کارانہ واپسی کے معاملے کا ازخود نوٹس لے لیا ، اٹارنی جنرل، چیئرمین نیب اور پراسیکیوٹر جنرل کو نوٹسز جاری کر دیئے۔رجسٹرار آفس سپریم کورٹ نے جسٹس امیر ہانی مسلم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ کے حکم پر نوٹ چیف جسٹس آف پاکستان کو بھجوایا، نوٹس میں کہا گیا ہے کہ نیب قانون میں کرپشن کی رقم کی رضاکارانہ واپسی کی دفعہ 25 اے بظاہر آئین سے متصادم ہے جس کا عدالتی جائزہ لینے کی ضرورت ہے، بدعنوان شخص رضا کارانہ طور پر رقم واپس کر کے اپنا دامن صاف کر لیتا ہے۔چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے معاملے کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے سماعت ستمبر کے آخری ہفتے میں مقرر کرنے کی ہدایت کی ہے جس کیلئے اٹارنی جنرل اشتراوصاف ، چیئرمین نیب قمرزمان چودھری اور پراسیکیوٹر جنرل وقاص ڈار کو نوٹس جاری کر دیئے گئے ہیں,

مزید : صفحہ اول