ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کا سنٹرل جیل پشاور کا دورہ

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کا سنٹرل جیل پشاور کا دورہ

پشاور( پاکستان نیوز)ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پشاومحمد رؤف خان اور سپیشل سیکر ٹری داخلہ سراج خان نے جمعرات کے روز سنٹرل جیل پشاور کا دورہ کیا اور جیل کے مختلف بلاکوں اور بیرکوں میں قیدیوں کو فراہم کی جانے والی سہولتوں، ان کی ضروریات، خوراک اور مشکلات کا تفصیلی جائزہ لیا۔ اس موقع پر صدر پشاور بار ایسوسی ایشن امجد علی ، سپرنٹنڈنٹ سنٹرل جیل پشاور مسعود الرحمان، ڈپٹی پبلک پراسیکوٹر پشاور قیصر خان، ایم ایس پولیس سروسز ہسپتال عاشو ر خان آفریدی، جوڈیشل مجسٹریٹ محمد اصغر اور دیگر متعلقہ حکام ان کے ہمراہ تھے۔ اپنے دورے کے دوران ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پشاور نے معمولی نو عیت کے جرائم میں قید 55 قیدیوں کے کیسز نمٹاتے ہوئے انکی رہائی کے فوری احکامات جاری کئے۔ چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ کی خصوصی ہدایت پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پشاور اور سپیشل سیکر ٹری داخلہ نے سپیشلسٹ ڈاکٹروں اور دیگر متعلقہ آفسران کی ٹیم کے ہمراہ پشاور جیل کے قیدیوں کو دی جانے والی طبی سہولتوں ، کھانے پینے کی اشیا ء کے معیار، قیام گاہوں کی حالت اور دیگر انتظامات سے متعلق آگاہی حاصل کی اور ان میں مزید بہتر ی لانیکی ہدایت کی جبکہ جیل سپرنٹنڈنٹ مسعود الرحمان نے انہیں جیل میں درپیش مسائل اور ضروریا ت سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی۔ سیشن جج اور سیکرٹری داخلہ نے قیدیوں خاص طور پر خواتین اور بچوں کے علاج معا لجہ میں بر وقت اور بہتر اقدامات اُٹھانے کے احکامات دیتے ہوئے کہا کہ اس سلسلے میں متعلقہ محکمے کے ساتھ فوری رابطہ کیا جائے ۔ وہ جیل میں قائم ہسپتال بھی گئے اور مریضوں سے ان کی صحت اور سہولتوں کے بارے میں دریافت کیا۔ انہوں نے نئی جیل کی تعمیر، بیماریو ں کی روک تھام کیلئے اسپرے وغیرہ سمیت دیگر اقدامات اور کھانے پینے اور قیا م کے امور سے متعلق معلومات حا صل کرنے کے بعد ان میں مزید بہتری لانے کی ہدایت کی جبکہ مختلف بیرکوں میں قیدیوں سے فردا فردا گزارشات سنیں اور ان کے ازالے کیلئے موقع پرضروری احکامات صادر کیے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر