وفاقی کابینہ نے کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے فیصلوں کی توثیق سمیت ایجنڈے کے 18 نکات کی منظوری دیدی

وفاقی کابینہ نے کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے فیصلوں کی توثیق سمیت ایجنڈے کے ...
وفاقی کابینہ نے کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے فیصلوں کی توثیق سمیت ایجنڈے کے 18 نکات کی منظوری دیدی

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی کابینہ کا اجلاس افغان مہاجرین کے پاکستان میں قیام میں توسیع اور کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے فیصلوں کی توثیق سمیت ایجنڈے کے 18 نکات کی منظوری دینے کے بعد ختم کر دیا گیا ہے۔ وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ توانائی کے بڑے منصوبوں پر توجہ دے کر توانائی بحران ختم کرنا چاہتے ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں 18 نکات کی منظوری دی گئی جن میں پاکستان میں افغان مہاجرین کے قیام میں توسیع بھی شامل ہے جبکہ برآمدات میں اضافے کی حکمت عملی کی منظوری کا معاملہ آئندہ اجلاس کیلئے موخر کر دیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں گزشتہ اجلاس کے فیصلوں کی منظوری دینے کے علاوہ پاک انڈونیشیاءدفاعی شعبے میں تعاون کے معاہدے، سٹیٹ بینک اور اردن کے بینک کے درمیان یادداشت اور کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے فیصلوں کی توثیق کی گئی۔ اس موقع پر وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ توانائی بحران پر قابو پانے کیلئے حکومت پرعزم ہے اور بڑے منصوبوں پر توجہ دے کور توانائی بحران ختم کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو تمام منصوبے بروقت مکمل کرنے اور میگا منصوبوں میں شفافیت کو یقینی بنانے کی ہدایت بھی کی۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

رپورٹ کے مطابق اجلاس میں بھاشا ڈیم کیلئے زمین کے حصول، گلگت بلتستان کے متاثرین کی مالی امداد، چلاس میں بنجر زمین کے معاوضے کی ادائیگیوں، نجکاری سے متعلق کابینہ کمیٹی کے فیصلوں کی توثیق اور کسٹم کے شعبے میں بیلاروس سے مذاکرات شروع کرنے کی منظوری بھی دی۔

مزید : قومی /اہم خبریں