رائے ونڈ جانے سے روکا گیا تو لاہو ر بند کردینگے، سپیکر ایوان میں ہوتے تو بھی ویسی ہی تقریر کرتا: عمران خان

رائے ونڈ جانے سے روکا گیا تو لاہو ر بند کردینگے، سپیکر ایوان میں ہوتے تو بھی ...
 رائے ونڈ جانے سے روکا گیا تو لاہو ر بند کردینگے، سپیکر ایوان میں ہوتے تو بھی ویسی ہی تقریر کرتا: عمران خان

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ  رائے ونڈ ضرور جائیں گے اور جائیں گے بھی محرم سے پہلے،روکا گیا تو لاہو ر شہر بند کردینگے، سپیکر ایوان میں اگر موجود ہوتے تو تب بھی ویسا ہی خطاب کرتا جیسا کہ جمعرات کو کیا۔ 

بنی گالہ میں اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  عمران خان نے  کہا ہے کہ ہم رائے ونڈ ضرور جائیں گے اور جائیں گے بھی محرم سے پہلے۔تاریخ میں تبدیلی کا فیصلہ اپوزیشن جماعتوں سے مشاورت کیلئے کیا گیا ہے،ہم وزیراعظم کے گھر نہیں رائے ونڈ جارہے ہیں،پرویز مشرف اور نواز شریف کی جمہوریت میں کوئی فرق نہیں ہے بلکہ یہ ابتر ہیں ، سانحہ ماڈل ٹاؤں مشرف کے دور میں تو نہیں ہوا،ادارے تباہ ہوچکے ہیں،میں پورے پاکستان کو دعوت دیتا ہوں کے رائے ونڈ کے جلسہ میں شرکت کریں ،اگر روکنے کیلئے پنجاب پولیس کا استعمال کیا تو ہم پورا شہر بند کردیں گے،ردعمل کے ذمہ دار حکمران ہوں گے،ہم کوشش کریں گے تمام اپوزیشن جماعتوں کو ساتھ ملانے کی کوشش کریں گے،اگر کوئی نہ بھی آیا تو اکیلے جلسہ کرینگے،باقی جماعتیں چاہیں گی تو تاریخ میں تبدیلی کی جاسکتی ہے،احتجاج ہمارا حق ہے جسے ضرور استعمال کریں گے۔

دوہفتوں میں عمران خان معافی مانگیں ورنہ عدالتی کارروائی ہوگی، حمزہ شہبازشریف نے نوٹس بھیج دیا

سپیکر ایاز صادق کے عمران خان سے تلخ کلامی سے بچنے کے لیے چیمبر میں چلے جانے کے سوال کے جواب میں عمران خان نے بتایاکہ  سپیکر غیرجانبدار نہیں ہے ، پوری دنیا میں سپیکر ایک آزاد شخص ہوتاہے ، ہاؤس آف لارڈز کا سپیکر بھی اپنی پارٹی سے وابستگیاں ختم کرکے بیٹھتاہے ، ایاز صادق اگر ایوان میں ہوتے تو بھی وہی تقریر کرتا،  دھمکیاں دینے والے ہم سے گھبرائے ہوئے ہیں ہم نہیں،ن لیگ فاشسٹ جماعت ہے،انہوں نے ماڈل ٹاﺅن میں قتل عام کروایا،جمہوریت جمہوری اداروں سے آتی ہے ٹانگیں توڑنے کی دھمکیوں سے نہیں۔

انہوں نے پریس کانفرنس کے دوران ایک سوال کے جواب میں کہا ہے کہ حکومت نے کسی ادارے کوخودمختارنہیں رہنے دیا،2014میں ہمارےکارکنوں پرتشددکیاگیا،7افرادکوماراگیا'ڈکٹیٹرکادور اورآج کی پولیس نیب یاکوئی بھی ایسا ادارہ نہیں جو مضبوط ہواہو،یہ حکومت تمام جمہوری اداروں کو اپنی گرفت میں کر چکی ہے، اپوزیشن جماعتوں کودعوت دیتے ہیں کہ ہمارے ساتھ شرکت کریںپنجاب پولیس نے ماڈل ٹاون میں بےگناہ افرادکومارا۔

مزید : قومی /اہم خبریں