بھارت کے بڑے ہسپتال میں جنسی زیادتی کا انتہائی شرمناک واقعہ ،ڈاکٹر اور وارڈ بوائے نے 19سالہ مریض لڑکی کو اپنی شیطانی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا

بھارت کے بڑے ہسپتال میں جنسی زیادتی کا انتہائی شرمناک واقعہ ،ڈاکٹر اور وارڈ ...
بھارت کے بڑے ہسپتال میں جنسی زیادتی کا انتہائی شرمناک واقعہ ،ڈاکٹر اور وارڈ بوائے نے 19سالہ مریض لڑکی کو اپنی شیطانی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا

  


احمد آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت میں خواتین کی عصمت دری کے واقعات اتنے بڑھ چکے ہیں کہ خواتین کے ساتھ ریپ کی خبریں اپنی اہمیت کھونا شروع ہو چکی ہیں اور مودی سرکار بھی ان واقعات کی بیخ کنی میں مکمل ناکام نظر آتی ہے ،ایسا ہی ایک افسوسناک واقعہ بھارتی گجرات کے گاندھی نگر ضلع میں ایک انتہائی اہم ہسپتال میں پیش آیا ہے جہاں ڈاکٹر اور وارڈ بوائے نے ڈینگی سے متاثرہ 19سالہ لڑکی مریض کو باری باری ریپ کا نشانہ بنا دیا ،پولیس نے لڑکی کے سنگین الزام پر شیطان صفت ڈاکٹر اور وارڈ بوائے کو گرفتار کر لیا ہے ۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

بھارتی نجی چینل ’’زی نیوز ‘‘ کے مطابق ریپ کا یہ شرمناک واقعہ بھارتی ریاست گجرات کے ضلع گاندھی نگر کے ایک اہم ہسپتال میں پیش آیا ،19سالہ متاثرہ لڑکی کے مطابق وہ ڈینگی کا علاج کرانے کی غرض سے ہسپتال کے آئی سی یو وارڈ میں زیر علاج تھی کہ گذشتہ شب ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر رامیش چوہان اور وارڈ بوائے چندر کانت وینکار نے تنہائی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اسے زبردستی باری باری اپنی ہوس کا نشانہ بنایا ۔متاثرہ لڑکی کی شکائت پر مقامی پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے ڈاکٹر چوہان اور وارڈ بوائے چندر کانت کو گرفتار کر کے مقامی عدالت میں پیش کیا جہاں جج نے ان دنوں ملزموں کا ایک روزہ جسمانی ریمانڈ دیتے ہوئے پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے ۔پولیس کا کہنا تھا کہ یہ واقعہ ایسے بڑے ہسپتال میں پیش آیا جہاں انتظامیہ کی جانب سے مریض کے لواحقین کو رات ہسپتال میں قیام کی اجازت نہیں دی جاتی ۔ دوسری طرف مقامی این جی اوز نے ایک بڑے اور اہم ہسپتال میں ڈاکٹراور وارڈ بوائے کی جانب سے 19سالہ مریض لڑکی سے جنسی زیادتی کے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے احتجاج بھی کیا ہے ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...