این اے 120کے عوام ترقی کیلئے انرجی سیور پر مہر لگائیں،یعقوب شیخ

این اے 120کے عوام ترقی کیلئے انرجی سیور پر مہر لگائیں،یعقوب شیخ

  



لاہور( ایجوکیشن رپورٹر )قومی اسمبلی کے حلقہ این اے120سے امیدوار محمد یعقوب شیخ نے کہا ہے کہ ہمارا مقابلہ کسی سیاسی پارٹی نہیں نظریہ پاکستان کے دشمنوں سے ہے۔ہم نے سیاست کا آغاز کاروبار نہیں عبادت سمجھ کرکیا ہے۔انرجی سیور روشنی کا نشان ہے‘ ملک میں امن، روزگار اور تجارت کی بہتری کے لیے انرجی سیور پر مہر لگائیں۔ہم آپ کے ووٹ کی حفاظت اورپاکستان کے مسائل حل کریں گے۔ خدمت انسانیت کا جذبہ لیکر سیاست کے میدان میں اترے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے باغ منشی لدھا راوی روڈ میں انتخابی جلسہ اور لیک روڈ چوبرجی، لکشمی چوک و دیگر علاقوں میں کارنر میٹنگز سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ باغ منشی لدھا جلسہ گاہ پہنچنے پر ان کا زبردست استقبال کیا گیا۔ میزبان سماجی رہنما شفقت علی جگنو، آصف شاہ اور دیگر نے بھی محمدیعقوب شیخ کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا۔

یعقوب شیخ نے اپنے خطاب میں کہاکہ آج ہمارا مقابلہ ان سے ہے جنھوں نے جیتنے کے بعد کبھی حلقہ میں شکل نہیں دکھائی۔ اہلیان حلقہ این اے 120سے اپیل کرتا ہوں کہ نظریہ پاکستان و کشمیریوں کے خون سے بے وفائی کرنے والوں کو ووٹ نہ دیں۔اگر چاہتے ہیں کہ ہم ہر میدان میں ترقی کریں تو ہمارا ساتھ دیں اور انرجی سیور پر مہر لگا کر پاکستان کو اندھیروں سے روشنی میں لے کر آئیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستانی عدالتوں نے حافظ محمد سعید کو خدمت انسانیت کا کام جاری رکھنے کی اجازت دی ہے۔ الیکشن مہم میں ایک تصویر ملک کے محسن اور دوسرے پوسٹر پر پوری پاکستانی قوم کے اس مجرم کی ہے جس کے متعلق اعلی عدالتوں نے فیصلہ سنایا ہے۔ سپریم کورٹ کے 5 معزز ججوں نے فیصلہ دیا ہے کہ سابق وزیر اعظم صادق اور امین نہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کے حکم پر فلاح انسانیت کے ایمبولینس بوتھ اکھاڑ کر دریائے راوی پر پھینک دیے گئے میں اس کی مذمت کرتا ہوں۔حکمرانوں کی اپنی اولاد، پیسہ اور کاروبار ملک سے باہر ہے جبکہ ملک میں رہنے والوں کو غلام سمجھا جاتا ہے۔یعقوب شیخ نے کہاکہ پاکستان کسی پارٹی یا شخص کے لیے نہیں اسلام کے لیے بنایا گیا تھا۔ہم نظریہ پاکستان کو لیکر سیاست میں اترے ہیں۔ آپ کے ووٹ کے تقدس کو اب تک پامال کیا گیا ہے۔ہم پاکستان میں اجالا اور روشنی لانا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستان دو قومی نظریہ کی بنیاد پر معرض وجود میں آیا تھا۔یہی نظریہ ہی پاکستان کی بقا اور ترقی کا ضامن ہے۔اس وقت نظریہ پاکستان کو پس پشت ڈال کر لبر ل ازم کو پروان چڑھانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ یہ سازشیں پاکستانی قوم کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دے گی۔ انہوں نے کہاکہ این اے 120 کی عوام صاف پانی سے محروم ہے۔ ہمارے نوجوان ڈگریاں لیکر سڑکوں پر دھکے کھانے پر مجبور ہیں۔ ہم لوگوں کے مسائل حل کرنے کیلئے سیاست میں اترے ہیں۔قوم کو مایوس نہیں کریں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...