مغلپورہ پولیس کی ڈرگ مافیا سے ڈیل ، علاقہ میں نشہ عام ، نوجوان تباہی کے دہانے پر

مغلپورہ پولیس کی ڈرگ مافیا سے ڈیل ، علاقہ میں نشہ عام ، نوجوان تباہی کے دہانے ...

  



لاہور(اپنے کرا ئم ر پو رٹر سے)تھانہ مغل پورہ کی حدود میں شہری تھانے میں انصاف کے حصول کے لیے دھکے کھانے پر مجبورہوگئے ۔منشیات فروشوں نے نوجوانوں کی رگوں میں نشہ م،نتقل کرنے کا کروبار تیز تر کر دیا۔نشئی جیب تراش پورے علاقے میں پھیل چکے ہیں۔عوام کو لوٹنے کی بلاناغہ وارداتوں کا کوئی حساب نہیں۔معمولی واقعات پر اندراج درخواست ناممکن ہو چکا، عوام کی حفاظت پر مامور افسران نے چپ سادھ لی اور علاقے میں با اثر ڈرگ مافیا سے بھاری ڈیل کر کے نوجوانوں کو مرنے کے لئے چھوڑ دیا ہے، پہلی با ر ایس ایچ او شپ کر نے والے شیخ اکمل نے بھی علاقے میں منشیات کے بڑھتے واقعات پر ایکشن لینا چھوڑ دیا اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف چھاپے مارنے بند کردیے ۔تفصیلات کے مطابق مغل پورہ میں سرعام "سرکار"کی چھتر چھایہ تلے منشیات فروشوں میں عیسائیاں والی گلی کا کھنڈ ا نامی شخص،بلاورعرف سوہنا،ریلوے سٹیڈیم کا ہارون عرف جونا ،بیل احاطہ واشنگ لائن کا ماجو،مجاہد آباد گلی نمبر 44کا ماما پوتی،عقب تھانہ کا شاہد مسیح،60کوارٹر بڑے میاں کا بلو عیسائی،پطرس مسیح اور شہزاد عرف ککی ،ملت کالونی کا چوہدری عنایت مسیح،باغبانپورہ کا بھولا گجر اور ہیرا گجر ،مین بازار کا عاصم عرف بھیا اور عیسیٰ کا آباد کا لبھا مسیح شامل ہیں۔ پورے علاقے میں معروف جیب تراشوں کا بسیرا ہے جن میں عتیق افضل ولد افضل ،زاہد اورمحلہ امرت سری کاظہیر

سرفہرست ہیں۔تمام ٹولیوں کی صورت میں رہتے ہیں ، بسوں ،ویگنوں اور بازاروں میں رش والی جگہوں پر لوگوں کی جیب کاٹتے ہیں۔پولیس کا گشت نہ ہونے کی وجہ سے راہزنی کی وارداتیں بھی بڑھ چکی ہیں۔ڈاکو مزاحمت پر گولی مارنے سے بھی دریغ نہیں کرتے ہیں ۔ذرا ئع کا کہنا ہے کہ چھو ٹی مو ٹی وارادت کا مقدمہ ہی در ج ہی نہیں کای جاتا۔ سروے کے دوران مقامی رہائشیوں نے نمائندہ "پا کستان "سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ آئے روز پولیس ناکے لگا کر موٹرسائیکل سوار وں کو خوار کرتے ہیں،انہیں چاہیے کہ علاقے کے جرائم پیشہ افراد کے خلاف کریک ڈاؤن کر کے انہیں گرفتار کریں تاکہ مقامی رہائشیوں کی بھی سکون میسر آسکے لیکن پولیس اہلکاروں نے شریف شہریوں کو دبوچنے اور جرائم پیشہ افراد کی پشت پناہی کرنا ہی اپنا نصب العین بنا لیا ہے ۔اسکے علاوہ شہریوں کا کہنا تھا کہ تھانے میں جانے والے سائلوں سے انتہائی ہتک آمیر سلوک کیا جاتا ہے۔ اکثر اوقات شہری اپنے ساتھ ہونیوالی ناانصافی کے لیے تھانے جانے سے گریز کرتے ہیں ۔اہل علاقہ نے مطالبہ کیا کہ اعلی حکام کی جانب سے تھانوں میں چیک اینڈ بیلنس کا نظام بنایا جائے تاکہ ارباب اختیار بھی اصل حقیقت سے آگاہ ہوسکیں۔اس حوالے سے ایس ایچ او مغل پو ر ہ شیخ اکمل کا کہنا ہے کہ وہ جرا ئم کی شر ح بڑھنے پر کو ئی مو قف نہیں دے سکتے سب کچھ افسران کے علم میں ہے ۔

مزید : علاقائی