2030ء تک پاکستان کی شرح خواندگی 100فیصد کرنا ٹارگٹ

2030ء تک پاکستان کی شرح خواندگی 100فیصد کرنا ٹارگٹ

  



ملتان،بدھلہ سنت،وہاڑی،چوک میتلا، بہاولپور ،رحیم یارخان،ڈیرہ غازیخان(سٹاف رپورٹر ،نمائندگان )ملتان سمیت ملک کے طول وعرض میں لٹریسی ڈے کا انعقاد کیا گیا ۔تعلیمی اداروں اور سماجی تنظیموں زیراہتمام تقاریب رحیم یارخان میں کوئی تقریب منعقد نہ ہوسکی۔ملتان،بدھلہ سنت(بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

سے سٹاف رپورٹر،نامہ نگار کے مطابق لٹریسی ڈیپارٹمنٹ ملتان کے زیر اہتمام 8ستمبر لٹریسی ڈے کے حوالے سے سیمینار ،واک کا اہتمام گورنمنٹ بوائز کمپری ہنسو ہائیر سیکنڈری سکول گلگشت ملتان میں کیا گیا ۔جس میں مہمان خصوصی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سیکنڈری ریاض احمد خان تھے۔ تقریب میں ڈی ای او لٹریسی محمد عامر رزاق، پروجیکٹ لٹریسی کوآرڈینیٹر مخدوم مدثر قریشی، لٹریسی آفیسرز رانا رمضان، محمد عابد، محمد باقر حسین شاہ، مظفر عباس، کامران ہاشمی، منصور احمد، احسن ناصر، محمد تنویر، میاں جہانزیب، محمد عمر، محمد بلال، بابر نذیر ، محمد کاشف کے علاوہ مختلف مکتبہ فکر کے افراد، این جی اوز کے نمائندوں، ایجوکیشن افیسران، لڑیسی ٹیچرز نے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سیکنڈری ملتان ریاض احمد خان نے کہا کہ 2030تک پاکستان کا لٹریسی ریٹ 100فیصد کرنا ٹارگٹ ہے۔ لٹریسی ٹیچرز شرح خواندگی میں اضافہ کرکے ملکی ترقی میں اہم کردار ادا کر سکتی ہیں اور انہیں اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔ ڈی ای او لٹریسی ملتان محمد عامر رزاق نے شرکا ء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہر پٹرھا لکھا شخص ایک ان پڑھ شخص کو تعلیم دے تو شرح خواندگی 100فیصد ہو سکتی ہے۔ ہم نے پنجاب خصوصاََ ملتان کو جہالت کے اندھیرے سے نکالنا ہے ان پڑھ افراد کو تعلیم کی روشنی سے آراستہ کرنا ہے۔ 8ستمبرلٹریسی ڈے کے سیمینار کے بعد شرکا نے گورنمنٹ بوائز کمپری ہنسو ہائیر سیکنڈری سکول گلگشت ملتان سے بوسن روڈ تک واک کا اہتمام کیا۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ+نا مہ نگار کے مطابق محکمہ لٹریسی اینڈ نان فارمل بیسک ایجوکیشن وہاڑی کے زیر اہتمام انٹرنیشنل لٹریسی ڈے کے حوالے سے وہاڑی میں آگاہی واک اور سیمینا ر کا انعقاد کیا گیالٹریسی واک میونسپل کمیٹی وہاڑی سے شروع ہوکر ماڈل ہائی سکول میں اختتام پذیر ہوئی جہاں خورشید ہال میں لٹریسی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے چیف ایگزیکٹو آفیسرڈسڑکٹ ایجوکشن اتھارٹی شوکت علی طاہرنے کہا کہ علم ایک روشنی اور جہالت تاریکی ہے مسائل کے حل کے لیے تعلیم کا ہونا نہایت ضروری ہے اوردین اسلام میں علم کو ہر چیز پر فوقیت دی گئی ہے انہوں نے کہا کہ نبی کریم ؐ نے مسلمان مردو عورت پر علم کے حصول کو فرض قرار دیا ہے جس سے علم کی اہمیت واضح ہے ضلع وہاڑی میں ناخواندگی کو کم کرنے کے لیے لٹریسی ڈیپارٹمنٹ کی کاوشیں قابل ستائش ہیں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر لٹریسی وہاڑی محمد ماجد اقبال نے کہا کہ لٹریسی ڈیپارٹمنٹ وہاڑی میں خواندگی کو بڑھانے کے لیے کوشاں ہیں ڈیپارٹمنٹ نے ناخواندگی کو کم کرنے کے لیے 2016 ؁ئسے 2017 ؁ئتک تعلیم بالغاں کے800 سنٹر کھولے جن میں بیس ہزار سے زائد ناخواندہ بالغان کو خواندہ بنایا گیاانہوں نے بتایا کہ415نان فارمل سکولوں میں 13ہزارسے زائد طلباو طالبات علم کے نور سے مستفید ہو رہے ہیں سیمینار میں سماجی تنظیم پلان پاکستان کے منیجر نے بھی علم کی اہمیت پر روشنی دالتے ہوئے کہا کہ تعلیم بالغاں کا پروگرام لٹریسی ڈیپارٹمنٹ کی عمدہ کاوش ہے لٹریسی واک اور سیمینا رمیں پراجیکٹ لٹریسی کوارڈینیٹر محمد بلال عابد ،ڈسٹرکٹ لٹریسی موبلائزر سید ندیم عباس شاہ، لٹریسی موبلائزرز، لٹریسی ٹیچرز و طلباء اور سیاسی و سماجی شخصیات نے بھرپورشرکت کی۔چوک میتلا سے نامہ نگار کے مطابق انٹر نیشنل لٹریسی ڈے کے موقع پر وہاڑی لٹریسی ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے واک کا اہتمام کیا گیاCEOایجو کیشن وہاڑی اور لٹریسی ڈیپارٹمنٹ کے افسران نے این ایف بی ای ٹیچرز سے خطاب کیا تفصیل کے مطا بق لٹریسی ڈیپارٹمنٹ وہاڑی نے انٹر نیشنل لٹریسی ڈے منا نے کے لئے واک کا اہتمام کیا اور گورنمنٹ ماڈل ہائی سکول وہاڑی میں پرو گرام منعقد کیا جس میں CEOوہاڑی شوکت علی طاہر محمد ماجد اقبال ڈی او لٹریسی مہر ممتاز سید ندیم شاہ ڈی ایل ایم نے نان فارمل بیسک ایجو کیشن ٹیچرز سے خطاب کیا انہوں نے بچوں کیے معیار تعلیم کو بہتر بنا نے اور چھوٹے بچوں کو تعلیم مہیا کرنے کے مخصوص طریقوں پر روشنی ڈالی اس موقع پرعمران خورشید لٹریسی موبلائزر بوریوالہ یامین بھٹی بلال عابد تحسین منور اقبال گلشن رانا محمد امجد و سینکڑوں کی تعداد میں این ایف بی ای کے ٹیچرز نے شرکت کی ۔بہاولپور سے بیورورپورٹ کے مطابق محکمہ لٹریسی اینڈ نان فارمل بیسک ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام ضلع بہاول پور میں ’’انٹرنیشنل لٹریسی ڈے‘‘ منایا گیا۔ اس سلسلہ میں مرکزی تقریب یونین کونسل جمال چنڑ کے نان فارمل سکول میں منعقد ہوئی۔ تقریب کے مہمان خصوصی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر(لٹریسی) زاہد نذیر خان نے اپنے خطاب میں خواندگی کی اہمیت اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ خواندگی معاشرے کی بقا کے لئے کلیدی کردار ادا کرتی ہے۔ انہوں نے والدین اورمعززین علاقہ پر زور دیا کہ وہ ناخواندگی ختم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں۔تقریب میں پراجیکٹر سٹاف، ٹیچرز کے علاوہ اہل علاقہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ بعد ازاں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر(لٹریسی) زاہد نذیر خان کی قیادت میں لٹریسی آگاہی مہم کے سلسلہ میں ایک واک کا اہتمام بھی کیا گیا۔رحیم یارخان سے ڈسٹرکٹ رپورٹرکے مطابق رحیم یار خان میں عالمی یوم خواندگی کے موقع پر کوئی تقریب منعقد نہ ہو سکی۔دنیا بھر میں 8ستمبر کا دن خواندگی کے عالمی دن کیطور پر منایا جاتا ہے۔ رواں سال اس دن کو ’ڈیجیٹل دنیا میں تعلیم‘ کے نعرے سے منسوب کیا گیا ہے۔آج کے دن دنیا بھر میں اس عہد کی تجدید کی جائے گی کہ دنیا میں کہیں بھی کوئی بھی بچہ تعلیم سے محروم نہ رہ پائے۔ پاکستان کے مختلف اضلاع میں بھی خواندگی کے عالمی دن کے حوالے سے ریلیوں، جلسوں اور دیگر تقریبات کا انعقاد کیا جا رہا ہے تاکہ لوگوں میں تعلیم کی اہمیت کو اجاگر کیا جاسکے تاہم ضلع رحیم یار خان میں اس حوالے سے سرکاری سطح پر کسی تقریب کا انعقاد نہیں کیا جا سکا۔یاد رہے پاکستان میں کسی بھی زبان میں سادہ خط پڑھنے اور لکھنے کی صلاحیت کے حامل افراد کو خواندہ تصور کیا جاتا ہے۔ آئین کے آرٹیکل 25 الف کے تحت ریاست پانچ سے سولہ سال تک کی عمر کے تمام بچوں کے لیے مفت اور لازمی تعلیم فراہم کرنے کی پابند ہے۔نیشنل پلان آف ایکشن 2013 تا 2018 کے تحت بھی شرحِ خواندگی میں 50 فیصد بہتری لانے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔2013ء کے انتخابی منشور میں پاکستان مسلم لیگ نواز نے وعدہ کیا تھا کہ صوبوں کے ساتھ مشاورت سے ملکی سطح پر 80 فیصد شرح خواندگی کو یقینی بنایا جائے گا۔ پاکستان پپیلز پارٹی نے شرحِ خواندگی کو 54 فیصد سے بڑھا کر 85 فیصد تک لے جانے اور پاکستان تحریکِ انصاف نے پاکستان میں شرحِ خواندگی بڑھانے کے لیے مالی اور انتظامی اقدامات کرنے کا وعدہ کیا تھا۔ سیاسی جماعتوں کی جانب سے کیے جانے والے بڑے بڑے وعدوں کے برعکس پاکستان میں شرح خواندگی 57 فیصد ہے جو کہ ہمسایہ ممالک بنگلہ دیش، سری لنکا، بھارت اور ایران سے کہیں کم ہے۔ پاکستان سوشل اینڈ لیونگ سٹینڈرز سروے 2014-15 کے مطابق ضلع رحیم یارخان کی شرح خواندگی صرف 45 فیصد ہے۔ شرح خواندگی کے لحاظ سے رحیم یار خان پنجاب کے 36 اضلاع میں سے 32ویں نمبر پر ہے۔ ایسے میں سرکاری سطح پر تعلیم کی اہمیت کو اجاگر کرنے اور عالمی یوم خواندگی کو منانے کے لیے کسی تقریب کا منعقد نہ کیا جانا قابل افسوس امر ہے۔ڈیرہ غازیخان سے بیور ورپورٹ کے مطابق عالمی یوم خواندگی کے حوالے سے ڈیرہ غازیخان میں آگاہی واک کا انعقاد کیاگیا جس کی قیادت ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل میاں محمد اقبال مظہر مہار نے کی . شرکاء اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اے ڈی سی جی میاں محمد اقبال مظہر مہار ، ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر فاروق احمد ، چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی عبدالغفار لنگاہ ، ڈسٹرکٹ آفیسر لٹریسی فوزیہ اور دیگر نے کہا کہ تعلیم سے ہی ترقی ممکن ہے . 2018تک ضلع ڈیرہ غازیخان میں سو فیصد شرح خواندگی کا ہدف پورا کرنا ہے جس کیلئے ہر فرد کو کردارادا کرنا ہوگا . محکمہ تعلیم کے ساتھ نان فارمل بیسک ایجوکیشن اور لٹریسی سنٹر تعلیم کے فروغ کیلئے اہم کردارادا کررہے ہیں . واک پولیس ایجوکیٹرپبلک سکول چوک سے کمشنر آفس تک نکالی گئی جس میں متعلقہ محکموں ، این جی اوز کے نمائندے، اساتذہ اور طلباؤطالبات کے علاوہ زندگی کے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والے افراد موجو دتھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر