سعد رفیق نے ریلوے ہیڈکوارٹرز میں سولر سسٹم کی تنصیب کا افتتاح کردیا

سعد رفیق نے ریلوے ہیڈکوارٹرز میں سولر سسٹم کی تنصیب کا افتتاح کردیا

  



لاہور(نمائندہ پاکستان)ریلوے ہیڈکوارٹرز میں سولر سسٹم کی تنصیب کے افتتاح کر دیا گیا، وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ جدید دور کے تقاضوں اور ضروریات کو پورا کرتے ہوئے پاکستان ریلویز کی چاروں ورکشاپوں، واشنگ لائن، ریلوے اسٹیشن، ہیڈ کوارٹرز، ڈویڑنل آفس، لوکو شیڈ اور کیرن ہسپتال سمیت تمام ورکنگ ایریاز کو لوڈ شیڈنگ فری کر دیا گیا ہے ۔پاکستان ریلویز نے اپنے ہیڈکوارٹرز میں سولر سسٹم کی کامیابی کے ساتھ تنصیب کر لی ہے جہاں سے ہر روز ایک ہزار یونٹ بجلی حاصل کی جا رہی ہے۔ وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق نے ریلوے ہیڈکوارٹرز میں سولر سسٹم کی تنصیب کے افتتاح پر سی ای او محمد جاوید انور، اے جی ایم مکینیکل محمد انصر باللہ خان اور چیف الیکٹریکل انجینئر عنبرین زمان سمیت انتظامیہ اور کارکنوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان ریلویز نے ایک اہم سنگ میل عبور کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریلوے ہیڈ کوارٹرز اور ریلوے کیرن ہسپتال میں لگائے جانے والے سولر سسٹمز سے سالانہ چار سے پانچ لاکھ یونٹ ہی حاصل نہیں کئے جائیں گے بلکہ اتوار سمیت چھٹیوں کے دنوں میں بجلی کی فاضل پیداوار لیسکو کو بھی فراہم کی جا سکے گی۔ انہوں نے کہا کہ ریلوے کے ورکنگ ایریاز کو لوڈ شیڈنگ فری بنانے میں ایک ایک میگاواٹ کے دو ڈیزل جنریٹنگ سیٹس کی تنصیب بھی اہم ہے، اس سے پہلے نصب ڈی جی سیٹس پچاس سے ساٹھ سال پرانے تھے اور اپنی صلاحیت کے مقابلے میں ایک چوتھائی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے جب بھی لوڈ شیڈنگ ہوتی تھی تو ورکشاپوں میں ایک گھنٹہ کام رک جانے سے دو ملین روپوں کے نقصان کا ریلوے کو سامنا کرنا پڑتا تھا۔ وزیر ریلویز نے کہا کہ لاہور میں ورکنگ ایریاز کو لوڈ شیڈنگ فری بنانے کے بعد ریلوے کے الیکٹریکل ڈپیارٹمنٹ نے ایک سو ریلوے اسٹیشنوں اور تمام ڈویڑنل آفسز کو بھی سولر سسٹم پر منتقل کرنے کی تجویز تیار کر لی ہے۔

مزید : صفحہ آخر