تعلیم کے بغیر ترقی ناممکن ہے‘ ڈی ای او بونیر

تعلیم کے بغیر ترقی ناممکن ہے‘ ڈی ای او بونیر

  



بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر) عالمی یوم خواندگی کے موقع پر ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسربخت ذادہ نے طلباء اساتذہ اور پرنسپلز سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب تک ہمارے معاشرہ میں تعلیم عام نہ ہو ہم بہ حیثیت قوم ترقی نہیں کرسکتے ۔معاشرہ میں بہت سے مسائل تعلیم سے جڑے ہوئے ہیں ۔جن ملکوں نے ترقی کے منازل طے کئے ہیں ۔انکی ترقی کا انحصار تعلیم پر ہے ۔موجودہ صوبائی حکومت معیار تعلیم دینے کے لئے اربوں روپے خرچ کررہی ہے ۔ابتک صوبہ خیبر پختون خواہ میں چالیس ہزار اساتذہ بھر تی کئے ہیں ۔جبکہ بہت جلد بارہ ہزار نئے اساتذہ بھر کریں گے ۔مگر ان تمام صورت حال کے باوجود اب بھی ملک میں لاکھوں بچے سکول نہیں جاسکتے ۔بونیر میں تقریبا تیرہ ہزار بچے سکول نہیں جاتے ۔حکومت کے ساتھ ساتھ والدین اور معاشرہ کی ہر فرد کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اپنے بچوں کے ساتھ ساتھ اپنے پڑوس میں رہنے والے بچوں کے والدین کو بتائے کہ وہ اپنے بچوں کو تعلیم کو سکولوں میں داخل کرائے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے امن چوک ڈگر میں گور نمنٹ پرائمری سکول ڈگر ،سینٹنئل ہائی سکول ڈگر کے طلباء اساتذہ اور پرنسپلز سے خطاب کے دوران کیا ۔واک کے شرکاء سے تحصیل کونسل ڈگر کے ناظم سعید الرحمان مفکر ،سینٹئیل ہائی سکول ڈگر کے پرنسپل لیاقت خسین باچا نے بھی خطاب کئے ۔اس موقع پر سکول کے طلباء بینرز اور پلے کارڈز اٹھارکھے تھے جس پر تعلیم کے خوالہ سے نعرے درج تھے ۔مقررین نے کہا کہ دور جدید میں تعلیم کے ساتھ ساتھ کمپیوٹر کی تعلیم لازمی ہے ۔دنیاں کے دیگر قوموں نے ترقی کے میدان میں کمپیو ٹر کی وجہ سے ترقی کے منازل طے کئے ہیں ۔سرکاری تعلیمی اداروں کی حالت روز بروز بہتر ہورہی ہے ۔اور بہت سے والدین نے اپنے بچوں کو پرائیویٹ تعلیمی اداروں سے نکال کر سرکاری تعلیمی اداروں میں داخل کرائے ہیں ۔موجودہ صوبائی حکومت تعلیم پر خصوصی توجہ دے رہی ہے اور سرکاری تعلیمی داروں میں بہتر اصلاحات کی وجہ سے عوام کا سرکاری ادارں پر اعتماد بحال ہورہاہے ۔انہوں نے اساتذہ پر زور دیا کہ وہ خوف خدا کی خاطر اپنے فرائیض منصبی احسن طریقہ سے انجام دے ۔حکومت ان بچوں کی وجہ سے ہمیں لاکھوں روپے تنحواہیں اور مراعات دے رہی ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...