زرعی یونیورسٹی ڈیرہ اور لکی مروت بارے آرڈیننس کا اجراء مستحسن اقدام ہے : لطف الرحمان

زرعی یونیورسٹی ڈیرہ اور لکی مروت بارے آرڈیننس کا اجراء مستحسن اقدام ہے : لطف ...

  



ڈیرہ اسماعیل خان (بیورورپورٹ)خیبر پختون خواہ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر مولانا لطف الرحمان نے کہا ہے کہ گورنر کے پی کی جانب سے زرعی یونیورسٹی ڈیرہ اسماعیل خان اور لکی مروت یونیورسٹی کے آرڈیننس کا اجرا جنوبی اضلاع کو مثالی تعلیم کی فراہمی کی جانب مثالی قدم ہے جس پر وفاقی حکومت ، مولانا فضل الرحمن اور سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف خراج تحسین کے مستحق ہیں۔ میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اقتصادی راہداری کے مغربی روٹ اور جنوبی اضلاع میں رابطہ سڑکوں کے منصوبہ جات کی منظوری اور کام کے آغاز کے بعد زرعی یونیورسٹی اور لکی مروت یونیورسٹی کے قیام میں ہونے والی پیش رفت سے مستقبل میں ہمارے خطہ کا روشن مستقبل یقینی امر ہے۔ انہوں نے کہا کہ تقریبا ڈیڑھ سال قبل قائد جمعیت مولانا فضل الرحمان کے مطالبہ پر وزیر اعظم میاں نواز شریف نے ہمارے علاقہ کے لیئے جس ترقیاتی پیکج کا اعلان کیا تھا رفتہ رفتہ وہ تمام منصوبہ جات عملی تعبیر کی سمت میں گامزن ہیں انہوں نے کہا کہ عوام کی خوشحالی علم کی ترقی جیسے منصوبوں سے قوموں کی زندگیاں بدل جاتی ہیں ڈیرہ اسماعیل خان میں زرعی یونیورسٹی کا قیام یہاں کے باسیوں کا دیرینہ خواب تھا جسکی تعبیر اب دنیا کے سامنے ہے انہوں نے کہا کہ گورنر کے پی کی جانب سے یونیورسٹیوں کو چارٹرڈ کرنے کے اعلامیہ پر ڈیرہ اسماعیل خان ۔ ٹانک اور لکی مروت کے عوام اور جمیعت علما اسلام کے کارکنوں کو میں مبارکباد دیتا ہوں اور اس ضمن میں صوبائی حکومت کو ہم اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کراتے ہیں انہوں نے کہا کہ زرعی یونیورسٹی ڈیرہ کے حوالے سے میں پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر اعجاز احمد خان کی متحرک اور مثالی قیادت میں محمد شعیب گنگوہی۔ ڈاکٹر سلیم جیلانی ۔ محمد فضل الرحمان اور دیگر ٹیم ممبران کو بھی مبارکباد پیش کرتا ہوں جنہوں نے ہر فورم پر اس عظیم منصوبہ کے لیئے اپنا مثبت اور تعلیم دوست کردار ادا کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر