2018ء کے انتخابات میں کلین سویپ کرینگے‘ محمد ایوب خان

2018ء کے انتخابات میں کلین سویپ کرینگے‘ محمد ایوب خان

  



مٹہ ( نما ئندہ پاکستان) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی نائب صدر محمد ایوب خان ضلعی نائب ناظم عبدالجبار خان اور حلقہ این اے 30کے متوقع امیدوار بریگیڈئر (ر) ڈاکٹر محمد سلیم خان نے کہا ہے کہ سی پیک منصوبے میں صوبے کیلئے گدھوں کی معاہدوں سے صوبے میں تبدیلی نہیں ایئگی انہوں نے کہا کہ عوام 2018کے الیکشن میں موجودہ حکومت سے اپنے ایک ایک ظلم کا انتقام لیں گے شریف لوگ ہے اور ہمیشہ سے شرافت کی سیاست کی ہے لیکن کسی کی بدمعاشی کی جواب خوب دینا بھی اتے ہیں حلقے کے صوبائی وزیر منہ کو قابوں میں رکھ کر باتیں کریں کیونکہ بعض باتوں میں پھر یو ٹرن لینا نہیں ہوتی وہ تو ہمارے خلاف سب کچھ بول لیتے ہیں لیکن ہم نے اپنے منہ بند رکھی ہے اگر کھول دیا تو پھر چھپنے کی جگہ نہیں ملی گی حکومت ہم نے بھی کی ہے اور کرتے ہیں لیکن اسطرح حکومت کسی نے پہلی نہیں دیکھی جس کی عملی کام کوئی بھی نہیں جبکہ منہ پر اسمان نیچے اور زمین اوپر لے جانے کی دعوے کرتے ہیں باچا خانی کی سرخ سیلاب نکل چکا ہے اب انکو روکنا کسی کی بس میں نہیں صوبائی وزیر سرکاری ملازمین اور اے این پی کے کارکنان پر اتنا ظلم کریں کہ کل وہ برداشت بھی کریں کسی بھی غریب کی زرعی زمینوں پر سکشن فور نہیں لگنے دینگے اشاڑے اور درشخیلہ کو خرید نے والے اپنے زمینوں پر سیکشن فور کیوں نہیں لگاتے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز مٹہ برتھانہ میں ایک بڑی شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا جلسے سے محمد قاسیم خان پنجاب سے ائے ہوئے اے این پی کے رہنماء محمد امیرخورشید خان عبدالجلال خان ایڈوکیٹ محمد علی شاہ غلام سرور محمد قیوم تور خان سردار صیب محمد نعیم خان گران خان حیدر علی شاہ انوارلحق اور دیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ شمولیتی جلسے میں مختلف سیاسی جماعتوں سے اخونذادہ فضل قدیم سلیمان شاہ نظر محمد جان انجینئر امیر محمد اور دیگر سینکڑوں خاندانوں نے عوامی نیشنل پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا جن کو پارٹی قائدین نے ٹوپیاں پہنا کر مبارکباد دی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت اور خصوصاً مٹہ ست تعلق رکھنے والے صوبائی وزیر نے حکومتی نشے میں انتقامی کاروائی کی ریکارڈ توڑ دی ہے لیکن حکومت کا یہ نشہ چند مہینوں کی ہے انشاء اللہ جب وہ حکومتی نشے سے نکل جائے تو تب پتہ چلے گا کہ حقیقت کیا ہے انہوں نے کہا کہ نوخارہ میں این جی او اور گاوں والوں نے ملکر گاوں کیلئے ہائیڈروپاور پراجیکٹ بنائے تھے صوبائی وزیر موقع غنیمت پاکر اسکا بھی افتتاح کیا جس میں حکومت کے کوئی کردار نہیں لیکن ان لوگوں کی پاس عوامی نیشنل پارٹی اور این جی اوز کی کاموں پر تختیاں لگانے کی علاوہ اور کچھ نہیں ہے انہوں نے کہا کہ یوٹرن والے ائندہ کیلئے احتیاط کرکے زبان استعمال کریں کیونکہ ہمارے تاریخ میں یوٹرن والی بات نہیں انہوں نے کہا کہ غریب عوام کی زمینوں پر سیکشن فور لگانا غریب عوام کی زمینوں کو ہڑپ کرنا ہے لیکن اے این پی ایسا ہرگز نہیں ہونے دینگے انہوں نے کہا کہ صوبائی وزیر سرکار ی ملازمین اور اے این پی کے کارکنان پر اتنا ظلم کریں جو کل خود بھی برداشت کریں کیونکہ وقت انے پر ان سے ایک ایک بات اور انتقامی کاروائیوں کا حساب لیں گے انہوں نے کہا کہ پہاڑوں میں غریبوں کی زمینوں پر قبضہ کرنا اور چرگاہوں پر پابند ی لگانا ظلم اور زیادتی ہے جس کی اے این پی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور اگر عوام نے ساتھ دیا تو پہلی فرصت میں غریب عوام کو انکی جائز حق دینگے انہوں نے کہا کہ بقول عمران نیازی بلدیاتی اداروں کو انکے صوبائی حکومت اور وزراء اختیارات دینے کو تیار نہیں تو اب ضروری ہے کہ بلدیاتی نمائندے اپنے حق کیلئے اواز اٹھائے کیونکہ عوام نے بلدیاتی نمائندوں کو بھی منتخب کی ہے اور ممبران اسمبلی کو بھی اور اگر صوبائی حکومت بلدیاتی نمائندوں کو اختیارات دینے کیلئے تیار نہیں تو پھر بلدیاتی الیکشن سے پہلے اور بعد میں جھوٹ پر مبنی اعلانات کیوں کرتے تھے اور بے اختیار بلدیاتی نظام بنانے کی ضرورت کیا تھی دریں اثناء جلسہ گاہ پہنچنے سے پہلے پہلی با اے این پی کے قائدین کے استقبال کیلئے مقامی لوگوں نے گھوڑوں کو سرخ جھنڈوں سے سجاکر استقبال کی اور قافلے کیساتھ جلسہ گا ہ پہنچ گئے جو مٹہ تحصیل میں پہلی بار ہوا

مزید : پشاورصفحہ آخر