آصف زرداری کیخلاف ٹھوس شواہد موجود، بربریت فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے ،نیب نے احتساب عدالت کے فیصلے کو لاہورہائیکورٹ راولپنڈی بنچ میں چیلنج کردیا

آصف زرداری کیخلاف ٹھوس شواہد موجود، بربریت فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے ...
آصف زرداری کیخلاف ٹھوس شواہد موجود، بربریت فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے ،نیب نے احتساب عدالت کے فیصلے کو لاہورہائیکورٹ راولپنڈی بنچ میں چیلنج کردیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)نیب نے آصف زرداری کواثاثہ جات کیس میں بری کرنے کے فیصلے کو لاہورہائیکورٹ راولپنڈی بنچ میں چیلنج کردیا،نیب نے اپیل میں موقف اختیار کیا ہے کہ احتساب عدالت نے مقدمے کے اہم گواہوں کونظراندازکیااورنیب کو اہم ریکارڈ پیش نہیں کرنے دیا،اپیل میں کہا گیا ہے کہ نیب کے پاس سابق صدر آصف زرداری کیخلاف 22 ہزار تصدیق شدہ دستاویزات موجودہیں، دستاویزات سابق صدر کی آف شورکمپنیوں،سرے محل،بینک اکاو¿نٹس سے متعلق ہیں،احتساب عدالت نے آصف زرداری کوسرسری سماعت کے نتیجے میں بری کرکے غلط مثال قائم کی جبکہ عدالت ریکارڈطلب کرکے مزیدکارروائی کرسکتی ہے،عدالت سے استدعا ہے کہ آصف علی زرداری کے کیس کافیصلہ میرٹ پرکیاجائے اور بربریت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے،نیب نے راولپنڈی بنچ کے سامنے کیس کی پیروی کیلئے ٹیم تشکیل دےدی ہے، نیب کی ٹیم اسپشل پراسیکیوٹرعمران شفیق کی سربراہی میں مقدمے کی پیروی کرے گی۔

مزید : قومی /اہم خبریں