”مریم بی بی آ رہی ہے، یہ سنتے ہی میں نے ویڈیو بنانا شروع کی تو پھر۔۔۔“ لاہور میں مریم نواز کی ریلی کی ویڈیو بنانے والی لڑکی کیساتھ ہولناک واقعہ پیش آ گیا ، بھرے بازار میں اس کیساتھ وہ کام ہو گیا جس کا کوئی لڑکی تصور بھی نہیں کر سکتی

”مریم بی بی آ رہی ہے، یہ سنتے ہی میں نے ویڈیو بنانا شروع کی تو پھر۔۔۔“ لاہور ...
”مریم بی بی آ رہی ہے، یہ سنتے ہی میں نے ویڈیو بنانا شروع کی تو پھر۔۔۔“ لاہور میں مریم نواز کی ریلی کی ویڈیو بنانے والی لڑکی کیساتھ ہولناک واقعہ پیش آ گیا ، بھرے بازار میں اس کیساتھ وہ کام ہو گیا جس کا کوئی لڑکی تصور بھی نہیں کر سکتی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 120 کے ضمنی انتخاب کی مہم اپنے عروج پر ہے اور سیاسی جماعتوں کی جانب سے روزانہ ریلیوں اور جلسے جلوسوں کا انعقاد کیا جا رہا ہے تاہم اس دوران چند افسوسناک واقعات بھی پیش آ رہے ہیں جو قابل تشویش بھی ہیں۔

لاہور میں ایک لڑکی منظرعام پر آئی ہے جس نے یہ الزام عائد کیا ہے کہ مریم نواز شریف کی ریلی کے دوران ریگل چوک کے قریب اس نے ویڈیو بنانے کی کوشش کی تو نامعلوم افراد نے اسے بالوں سے پکڑ کر گاڑی سے باہر گھسیٹ لیا اور پھر اسے بدترین تشدد کا نشانہ بنایا۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔بھارت میں بچہ پھانسی کے پھندے سے لٹک گیا ،روسی لڑکی نے 15ویں منزل سے چھلانگ لگا دی،انٹرنیٹ پر کھیلی جانے والی گیم بلیو ویل نے اب تک کتنے لوگوں کی جان لی ؟پریشان کن خبر آگئی ،پاکستانی انٹر نیٹ صارفین ہوشیار ہو جائیں کیونکہ ۔۔۔

مذکورہ لڑکی نے این اے 120 میں پی ٹی آئی کی امیدوار ڈاکٹر یاسمین راشد کیساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ”میں استنبول چوک سے ڈاکٹر یاسمین راشد کی قیادت میں نکلنے والی ایک پرامن ریلی سے نکلی اور آپ لوگوں کو پتہ ہو گا کہ بیڈن روڈ کے باہر ہی ایک باٹا شوز کی دکان ہے، میں نے روہاں سے اپنی بچی کو سکول کے بوٹ خرید کر دینے تھے۔ جیسے ہی میں نے ایچ کریم بخش کے سامنے سے ریگل چوک پار کیا تو وہاں کنٹینر لگے ہوئے تھے اور ٹریفک بھی سست روی کا شکار ہو گئی، میں نے ایک شخص نے پوچھا کہ کیا ہو رہا ہے تو اس نے کہا کہ مریم بی بی آ رہی ہے۔

میں اپنی گاڑی کے دروازے کا شیشہ کھول کر اس کے اوپر بیٹھ گئی اور ویڈیو بنانا شروع کر دی۔ پانچ یا سات سیکنڈز بعد مجھے کسی نے بالوں سے پکڑ کر باہر گھسیٹ لیا اور میں سڑک پر گر گئی، اس کے بعد مجھ پر لاتوں اور مکوں کی بارش کر دی گئی، اس تشدد سے میری ٹانگیں زخمی ہوئیں اور پورے جسم پر زخم آئے، وہاں کئی سرکاری گاڑیاں مریم نواز کی ریلی کے ساتھ چل رہی تھیں، ان میں سے ایک گاڑی نے آ کر میری ٹانگ کو ٹکر ماری اور گزر گئی،اس کے بعد میڈیا چینل والے بھی کھڑے تھے جنہیں میں نے سب کچھ بتایا، لیکن میں نہیں جانتی کہ انہوں نے رپورٹ کیا یا نہیں کیا۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔عامر خان کی دبئی میں پر اسرار خاتون کے ساتھ رنگ رلیاں، شرمناک ویڈیو منظر عام پر آنے سے سوشل میڈیا پر ہنگامہ

میرے ڈرائیور نے مجھے میرا موبائل اٹھا کر دیا، اور میں نے فون کر کے اپنے جاننے والے کو بلایا۔ جن لوگوں نے مجھے تشدد کا نشانہ بنایا ان میں سے ایک شخص میری چادر کھینچ رہا تھا اور میرے منہ پر ہاتھ مار رہا تھا، اس کے ساتھ ہی اس نے جو مغلظات بولے، وہ میں بتا نہیں سکتی۔ اس واقعے کے باعث میں بھی صدمے میں ہوں اور میری بچیاں بھی مسلسل رو رہی ہیں لیکن میری ہمت اب بھی عمران خان کیساتھ ہے اور انشاءاللہ انہیں کے ساتھ رہے گی۔ “

۔۔۔ویڈیو دیکھیں۔۔۔

مزید : ڈیلی بائیٹس