میانمار میں مسلمانوں کی نسل کشی، افغان طالبان بھی میدان میں آگئے

میانمار میں مسلمانوں کی نسل کشی، افغان طالبان بھی میدان میں آگئے
میانمار میں مسلمانوں کی نسل کشی، افغان طالبان بھی میدان میں آگئے

  



کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن) میانمار میں مسلمانوں پر ظلم و تشدد کی انتہاءکردی گئی ، ہزاروں کو موت کے گھاٹ اتار دیاگیا، املاک جلادی گئیں اور ثبوت مٹانے کے لیے لاشوں کو نذرآتش کردیاگیا جبکہ کئی جان بچا کر پڑوسی ممالک اور کھلے سمندر میں بھاگنے پر مجبور ہوگئے ۔ایسے میں افغان طالبان بھی میدان میں آگئے ۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق افغان طالبان نے میانمارمیں مسلمانوں کی نسل کشی کی مذمت کی جن پر امریکی حمایت یافتہ افغان حکومت کیلئے بے چینی پھیلانے اور بچوں سمیت عام شہریوں کی قتل وغارت گری کا الزام لگایاجاتاہے ۔ اپنے ایک بیان میں افغان طالبان کاکہناتھاکہ ”ہم اسلامی دنیا کی حکومتوں ، تنظیموں ، میڈیا اور انفرادی سطح پر برما کے مسلمانوں کے حق میں آنیوالے بیانات کو خوش آمدید کہتے ہیں جن میں مسلمانوں کیخلاف ہونیوالے ظلم کے خلاف آواز اٹھائی گئی ، اسی طرح ہم دنیا بھر کے مسلمانوں کو یہ بھی یاد دلاتے ہیں کہ ان مظلوم بھائیوں کو مت بھولیں “۔

’میں نہا رہی تھی کہ اچانک فائرنگ کی آواز آئی، جلدی سے کپڑے پہننے کی کوشش کی تو دروازہ توڑ دیا گیا اور وہاں ایک فوجی کھڑا ہنس رہا تھا، پھر اس نے۔۔۔‘ برما کی مسلمان لڑکی کی دل دہلا دینے والی کہانی پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں۔

مزید : بین الاقوامی