آل طبی پارٹیزکانفرنس لاہور کا نیشنل کونسل فار طب کے خلاف مشترکہ محاذ بنانے کا فیصلہ

آل طبی پارٹیزکانفرنس لاہور کا نیشنل کونسل فار طب کے خلاف مشترکہ محاذ بنانے ...
آل طبی پارٹیزکانفرنس لاہور کا نیشنل کونسل فار طب کے خلاف مشترکہ محاذ بنانے کا فیصلہ

  



لاہور (مشرف زیدی سے) وفاق اطباء پاکستان کے زیر اہتمام آل طبی پارٹیزکانفرنس لاہور میں منعقد ہوئی جس میں ملک بھر سے تمام فعال طبی تنظیموں کے صدور اور مرکزی عہدیداروں نے شرکت کی ۔ کانفرنس میں متفقہ لائحہ عمل طے کرتے ہوئے متنازعہ یونانی آیورویدک ایکٹ 2017 کومسترد کرتے ہوئے نیشنل کونسل فار طب پر بڑے ادویات ساز اداروں کی اجارہ داری کے خلاف مشترکہ محاذ بنا کر حکماء برادری کے حقوق کے لیے جدوجہد کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیاگیا۔آل طبی پارٹیز کانفرنس میں شریک تمام جماعتوں نے وزیر اعظم پاکستان جناب شاہد خاقان عباسی ‘ وزیر صحت محترمہ سائرہ افضل تارڑ اور سیکریٹری وفاقی وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز سے مطالبہ کیا ہے کہ قومی طبی کونسل کا سربراہ طبیب کو بنایا جائے ، مجوزہ یو اے ایکٹ 2017کا نیا متفقہ مسودہ تیار کرنے کا حکم دیا جائے۔ تمام طبی تنظیموں کے نمائندوں پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دی جائے جس کی سفارشات کی روشنی میں قومی طبی کونسل نیا مسودہ تیار کرے۔ طب یونانی کا الگ ڈائیریکٹوریٹ قائم کیا جائے۔ قومی طبی کونسل کی طرف سے نئے فارماکوپیا کے مطابق تمام نسخہ جات کو قانونی حیثیت دی جائے۔اس متفقہ قرارداد پر تمام طبی تنظیموں کے سربراہوں/ ان کے نمائندوں نے دستخط کئے۔

مزید : لاہور