گرمیت رام رحیم سنگھ کی رہائش گاہ سے ایسی چیز بنانے والی غیر قانونی فیکٹری پکڑی گئی کہ پولیس کی ہوائیاں اڑ گئیں,مقدمہ درج کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا

گرمیت رام رحیم سنگھ کی رہائش گاہ سے ایسی چیز بنانے والی غیر قانونی فیکٹری ...
گرمیت رام رحیم سنگھ کی رہائش گاہ سے ایسی چیز بنانے والی غیر قانونی فیکٹری پکڑی گئی کہ پولیس کی ہوائیاں اڑ گئیں,مقدمہ درج کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا

  



سرسا (ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارتی عدالت نے خود ساختہ روحانی پیشوا گرمیت رام رحیم سنگھ کو دو خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے جرم میں بیس سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے جبکہ بھارتی عدالت کے حکم پر پولیس نے ان کے ٹھکانوں پر بھی چھاپے مارنا شروع کر دیے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی پولیس کی جانب سے ریاست ہریانہ کے شہر سرسا میں واقع گرمیت کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا گیا تو وہاں سے غیر قانونی طور پٹاخے بنانے والی فیکٹری پکڑی گئی ہے ۔حکومتی ترجمان ستیش مشرانے کہاہے کہ فیکٹری سے کچھ مقدار میں بارودی مواد برآمد کیا گیاہے اور یہ غیر قانونی طور پر کام کیا جارہاتھا تاہم ڈیر ہ کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیاہے اور تحقیقات کا آغاز کر دیا گیاہے ۔بھارتی میڈیا کا کہناہے کہ فرانزک ماہرین اس مواد کی نوعیت اور اس کے مقاصد جاننے کیلئے کام کر رہے ہیں ۔

واضح رہے کہ چھاپے کے دوران گرمیت رام رحیم سنگھ کی رہائش گاہ میں دو سرنگیں بھی دریافت کی گئیں ہیں جن میں سے ایک سرنگ لڑکیوں کے ہاسٹل میں نکلتی تھی جبکہ دوسری پانچ کلومیٹر دو علاقے میں کھلتی تھی اور ممکنہ طور پر یہ فرار ہونے کیلئے بنائی گئی تھی ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...