روہنگیا مسلمانوں پر مظالم ،پاکستانی شہری نے عالمی فوجداری عدالت انصاف سے رجوع کرلیا

روہنگیا مسلمانوں پر مظالم ،پاکستانی شہری نے عالمی فوجداری عدالت انصاف سے ...
روہنگیا مسلمانوں پر مظالم ،پاکستانی شہری نے عالمی فوجداری عدالت انصاف سے رجوع کرلیا

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)روہنگیا مسلمانوں پر مظالم اوران کی نسل کشی پر میانمار کی ریاستی سربراہ آنگ سان سوچی اور مذہبی پیشواءآشن ورتھو کے خلاف پاکستانی شہری نے بین الاقوامی فوجداری عدالت انصاف میں پٹیشن دائر کر دی ۔

آپریشن ردالفساد: ملک کے مختلف علاقوں سے بھاری تعداد میں اسلحہ و گولہ برآمد

 درخواست بیرسٹر سید محمد جاوید اقبال جعفری کی جانب سے نیدر لینڈ کے شہر ہیگ میں واقعہ بین الاقوامی فوجداری عدالت انصاف میں ڈاک اوربذریعہ ای میل دائر کی گئی ہے ۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ میانمار کی ریاستی سربراہ آنگ سان سوچی اور مذہبی پیشواءآشن ورتھوکے ایماءپر روہنگیا مسلمانوں کو جانوروں کی طرح ذبح کر کے ان کا قتل عام اور نسل کشی کی جا رہی ہے،روہنگیا مسلمان خواتین اور بچوں کو بداخلاقی کے بعد قتل جبکہ مرد مسلمانوں کو جبری طور پر ہجرت پر مجبور کیا جا رہا ہے جو کہ انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی ہے،میانمار حکومت کی دہشت گردی کے نتیجے میں اڑھائی لاکھ مسلمان بنگلہ دیش اور تھائی لینڈہجرت کر گئے جبکہ ہزاروں مسلمانوں کو شہید کر دیا گیا،میانمار حکومت کی دہشت گردی عالمی امن کے لئے خطرہ بن چکی ہے،عالم اسلام اور مہذب دنیا روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کے خلاف دنیا بھر میں احتجاج جاری رکھے ہوئے ہیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے معاملے کی انکوائری کرکے میانمار کی ریاستی سربراہ آنگ سان سوچی اور مذہبی پیشواءآشن ورتھو کے خلاف قانون کے مطابق فوجداری کارروائی عمل میں لائی جائے،مزید استدعا کی گئی ہے کہ میانمار حکومت کو فوری طور پر مسلمانوں پر ظلم و تشدد بند کرنے کے احکامات کئے جائیں۔

مزید : لاہور


loading...