عائشہ گلالئی کس کے ساتھ مل کر عمران خان کے خلاف جلسے کی تیاری کررہی ہیں؟ وہ خبر آگئی جو کپتان کو پریشان کردے گی

عائشہ گلالئی کس کے ساتھ مل کر عمران خان کے خلاف جلسے کی تیاری کررہی ہیں؟ وہ ...
عائشہ گلالئی کس کے ساتھ مل کر عمران خان کے خلاف جلسے کی تیاری کررہی ہیں؟ وہ خبر آگئی جو کپتان کو پریشان کردے گی

  



کراچی (ویب ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کی رہنما عائشہ گلالئی نے کہاہے کہ ”اصل میں تحریک انصاف کو چلانے والے کوئی اور لوگ ہیں۔ جب وہ لوگ پارٹی کو چلانے کا سوچ رہے تھے تو اس وقت انہیں ایک سلیبریٹی کی ضرورت تھی، لہٰذا انہوں نے عمران خان کو آگے کردیا تھا جبکہ عمران خان تو اب تک سیاسی سوجھ بوجھ سے عاری ہیں۔ اب بھی لوگوں سے پوچھ پوچھ کر تقریریں اور پریس کانفرنسیں کرتے ہیں۔ تحریک انصاف کے تمام وہ لوگ جو نظریاتی ہیں، اس وقت میرے ساتھ ہیں۔“ عائشہ گلالئی نے یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ تحریک انصاف کے اکثریتی ارکان قومی اور صوبائی اسمبلی، کارکنان کی بڑی اکثریت بھی ان کے ساتھ ہے۔ ان کے بقول وہ بہت جلد پورے ملک کا دورہ کرنے والی ہیں اور اس دورے کے دوران وہ تحریک انصاف کی تنظیم سازی کریں گی، جس کے بعد پریڈ گراوند اسلام آباد میں ایک بڑا جلسہ بھی کیا جائے گا۔جس کی تیاری شروع کردی گئی ہے۔

نجی اخبار امت کو دیئے گئے انٹریو میں عائشہ گلالئی کا کہناتھا کہ وہ الیکشن کمیشن میں عمران خان کی درخوعاست پر اپنا مقدمہ بھرپور انداز میں لڑیں گی اور عمران خان کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑے گا۔ عائشہ کے بقول وہ حق پر ہیں اور یہ کہ انہوں نے تحریک انصاف کو چھوڑا نہیں ہے۔ عمران خان پر تنقید کی انہیں قانون اجازت دیتا ہے۔ ایک سوال پر عائشہ گلالئی کا کہنا تھا کہ ”یہ طے ہے کہ عمران کان کا ہر میدان اور مقام پر مقابلہ کروں گی۔ انہیں سستے میں نہیں چھوڑوں گی۔ میری قومی اسمبلی کی نشست عمران کان کی مرہون منت نہیں تھی۔ میں اس کی اہل تھی اور مجھے اس وقت بہترین پارلیمنٹیرین، بہترین سیاستدان اور رہنما کہا گیا تھا۔ میں پسے ہوئے طبقے کی نمائندگی کرتی ہوں۔ تحریک انصاف عمران خان کی جاگیر نہیں ہے۔ اس پارٹی کے لئے میں نے اور بہت سے لوگوں نے بہت قربانیاں دی ہیں اور بہت زیادہ محنت کی ہے۔“

عائشہ گلالئی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کے کارکنان بنی گالہ مارکہ اور جہاز گروپ کو مسترد کرچکے ہیں۔ اب وہ تحریک انصاف کے اندر نئی لیڈرشپ تلاش کررہے ہیں، جوان کو جلد مہیا کی جائے گی۔ عائشہ گلالئی نے مزید کہا کہ اس وقت صورتحال یہ ہے کہ پارٹی کارکنان عمران خان اور جہازوں والوں سے تنگ ہیں۔ ہر طرف کرپشن اور لوٹ مار مچی ہوئی ہے۔ صوبہ خیبرپختونخوا میں سونامی شجرکاری کا بہت شور مچایا گیا تھا۔ مگر اب انکشاف ہورہا ہے کہ صرف پانچ لاکھ درخت لگائے گئے ہیں۔ جبکہ دعویٰ دس لاکھ درختوں کا کیا گیا تھا۔ اس مہم میں شریک سترہ لوگوں کو معطل کیا گیا ہے اور کوشش کی جارہی ہے کہ اس بڑی کرپشن کو دبادیا جائے مگر ایسا ہونا ممکن نہیں ہوگا کیونکہ تحریک انصاف کے اپنے کارکنان اور ارکان اسمبلی اس کرپشن پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔

عائشہ گلالئی نے یہ الزام بھی عائد کیا کہ صوبے میں پختونخوا انرجی ڈویلپمنٹ آرگنائشین (پیڈو) میں من پسند تقرریاں کی جارہی ہیں۔ لوگوں کو بڑی بڑی گاڑیوں اور تنکواہوں پر رکھا گیا ہے، مگر اس ادارے کی کارکردگی صفر ہے۔ اس ادارے کے زیر اہتمام مائیکرو ہائیڈرل پروجیکٹ کے چیف ایگزیکٹو اکبر ایوب کی تعیناتی صرف اور صرف ذاتی تعلقات کی بنیاد پر کی گئی ہے حالانکہ ان کے پاس مطلوبہ اہلیت کا معیار نہیں ہے اور ان کی کارکردگی بھی زیرو ہے۔

عائشہ گلالئی کا کہنا تھا کہ راشد خان جو کہ بنی گالہ زمین کی خریداری میں عمران خان کا فرنٹ مین ہے، اس وقت خیبر بینک کا کرتا دھرتا بنا ہوا ہے۔ خیبر بینک کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ہر اجلاس میں شریک ہونا وہ اپنا فرض سمجھتا ہے۔ گلالئی کا یہ بھی کہنا تھا کہ عمران خان کے کہنے پر پرویز خٹک نے وزیراعلیٰ ہاوس میں سوئمنگ پول کی تعمیر شروع کی تھی، مگر عوامی دباو اور کارکنان کی جانب سے سخت احتجاج پر اس منصوبے کو کینسل کردیا گیا۔

مزید : کراچی


loading...