A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined offset: 0

Filename: frontend_ver3/Sanitization.php

Line Number: 1246

Error

A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined offset: 2

Filename: frontend_ver3/Sanitization.php

Line Number: 1246

تاجروں کی 2 روپے فی یونٹ بجلی اور گیس کی قیمت میں اضافہ پرتشویش

تاجروں کی 2 روپے فی یونٹ بجلی اور گیس کی قیمت میں اضافہ پرتشویش

Sep 09, 2018

فیصل آباد(آن لائن )فیصل آباد کے تاجروں نے 2 روپے فی یونٹ بجلی اور گیس کی قیمت میںیکدم46 فیصد اضافہ پرگہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بلاشبہ PTIکی حکومت اپنے 100 دنوں کے پلان میں فوری اور سخت لینے پر مجبور ہے لیکن یہ اضافہ صنعت و تجارت سمیت ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والے لوگوں پر ڈرون حملہ ثابت ہوگا اور متوسطو غریب عوام اسے برداشت نہیں کر پائینگے انہوں نے حکومت سے اس بلاجواز اضافے کو فوری واپس لینے کا مطالبہ کیا صدر انجمن تاجران سٹی فیصل آباد خواجہ شاہد رزاق سکا ،جنرل سیکرٹری چوہدری محمود عالم جٹ، نائب صدر محمد اصغراور سینئر رہنماؤں میاں شاہد گوگی، مرزا طالب صدیق بیگ ،مرزا مظہر صدیق بیگ ،حافظ شفیق کاشف نے وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے بجلی کی قیمت میں دو روپے فی یونٹ اور گیس کی قیمت میں 46 فیصد اضافے کی اجازت دینے پر انتہائی دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ تحریک انصاف کے سربراہ سے یہ امید نہیں تھی کیونکہ انہوں نے بر سر اقتدار آنے سے قبل وعدہ کیا تھا کہ وہ صنعت و تجارت سمیت ہر شعبہ کے لوگوں کوزیادہ سے زیادہ ریلیف دیں گے تا کہ پیداواری لاگت میں کمی کرکے ملکی برآمدات کو بڑھایاجا سکے لیکن پالیسی میکروں کے ہاتھوں مجبور ہوکرانہوں ے تو اپنی حکومت کے ابتدائی دنوں میں ہی عوام پر مہنگائی کے بم گرانا شروع کردیئے انہوں نے کہا کہ قیمتوں میں یہ بلا جواز اضافے مہنگائی کے عفریت کوکھلی چھوٹ دینے کاباعث بنیں گے تاجر رہنماؤں شوکت اللہ ، عمران مجید ملک، ملک محمد افضل، افتخار مخی ، عمران علی خان ،میاں لطیف صدیقی،میاں ریاض شاہدنے حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ قیمتوں اور ٹیکسوں میں اضافہ کی بجائے ایسا قدم اٹھائے کہ عمران خان کے وعدے کی روشنی میں عوام اکو حقیقی معنوں میں ریلیف مل سکے انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیر اعظم عمران خان بجلی اور گیس کی قیمتوں میں حالیہ اضافے سے صنعت وتجارت اور عام لوگوں پر پڑنے والے منفی اثرات کا ادراک کرتے ہوئے ان فیصلوں کو فوری واپس لیں۔

ورنہ اس سے ملک بھر میں کاروباری سرگرمیوں پر منفی اثرات شروع ہو جائیں گے اور اس کے نتیجہ میں بے روزگاری اور مہنگائی کا ایسا طوفان اٹھنے کا خدشہ ہے جسے سنبھالنا ہی مشکل ہو۔

مزیدخبریں