معیشت کو تجربات کی سولی پر چڑھانے سے منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں:پرویز حنیف

معیشت کو تجربات کی سولی پر چڑھانے سے منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں:پرویز حنیف

لاہور(نیوزرپورٹر)حکومت اورمتعلقہ ادروں کی جانب سے آئی سی یو میں پڑی معیشت کو تجربات کی سولی پر چڑھانے سے بہتری کی بجائے منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں،برآمدات کے فروغ کے لئے موثر پالیسی تشکیل دی جائے،ایسوسی ایشنز اورتاجر تنظیموں سے روابط کیلئے فوکل پرسنزتعینات کئے جائیں۔ان خیالات کا ظہار کارپٹ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے چیئر پرسن اورلاہور چیمبر کے سابق صدرپرویز حنیف نے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کہاکہ معیشت کی ترقی کیلئے کامیاب ممالک کوسٹڈی کیا جائے، خطے کے ممالک برآمدات میں ہمیں پیچھے چھوڑچکے ہیں جو لمحہ فکریہ ہے۔ حکومت برآمدات کے فروغ کے لئے پیداواری لاگت میں کمی کیلئے سہولیات فراہم کرے اور برآمدکنندگان کی بھی مکمل سرپرستی کی جائے۔ پرویز حنیف نے کہا کہ آئی سی یو میں پڑی معیشت کو تجربہ گاہ بنا دیا گیا ہے جس کی وجہ سے بہتری کی بجائے منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ حکومت قلیل مدتی اور طویل مدتی پالیسیاں بنائے اور حالات کے تناظر میں اس میں تبدیلی کی جائے۔ پالیسیوں کی تشکیل میں اسٹیک ہولڈرزسے مشاورت کو فروغ دیا جائے۔ ایسوسی ایشنز اور تاجر تنظیموں سے روابط کے لئے فوکل پرسنز تعینات کئے جائیں تاکہ حکومت کو مسائل اور تحفظات سے آگاہی حاصل ہو سکے۔

مزید : کامرس


loading...