پنجاب‘ بلوچستان بارڈر پر گور چانی‘ میسوری بگٹی قبائل کا گرینڈ ا من جرگہ 

  پنجاب‘ بلوچستان بارڈر پر گور چانی‘ میسوری بگٹی قبائل کا گرینڈ ا من جرگہ 

جام پور (نمائندہ خصوصی)سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی خان گورچانی کے والدنواب سردار پرویز اقبال خان گورچانی اور سابق وزیر داخلہ بلوچستان و سینیٹرمیر سرفراز خان بگٹی کی سربراہی میں پنجاب بلوچستان بارڈر پر گورچانی و میسوری بگٹی قبائل کا ”گرینڈامن جرگہ“ ٗ دونوں قبائل میں سیز فائر اور امن عمل بحال رکھنے پر اتفاق۔ تفصیلات کے مطابق سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی خان گورچانی کے والد نواب پرویز اقبال خان گورچانی اور سابق وزیر داخلہ بلوچستان و سینیٹرمیر سرفراز(بقیہ نمبر38صفحہ7پر)

 خان بگٹی کی سربراہی میں پنجاب بلوچستان بارڈر کے علاقہ ”جھنبڑی“اور”لکی دودر“ میں گورچانی اور میسوری بگٹی قبائل کے دوروز میں دو بڑے جرگے منعقد ہوئے جس میں دونوں قبائل کے وڈیروں اور مقدمین نے سینکڑوں کی تعداد میں شرکت کی۔ پنجاب کے گورچانی قبائل سے جمنرانی ٗ پتافی ٗ خلیلانی ٗ میرلانی اور دیگر اقوام کے وڈیروں جبکہ بلوچستان کے بگٹی قبائل کے میسوری ٗ شاہانی ٗ پاہی پتافی اور دیگر بگٹی قبائل کے مقدمین شریک تھے۔پنجاب اور بلوچستان کے دونوں جنگجو قبائل نے ماضی قریب میں ہونیوالے سیز فائر معاہدے کی توسیع کی اور تحریری طورپر نواب سردار پرویز اقبال خان گورچانی اور سابق وزیر داخلہ بلوچستان و سینیٹر میر سرفراز خان بگٹی کو اختیار دیا کہ وہ دونوں قبائل کے مابین وجہ فساد و تنازعات بننے والی متنازعہ زمینوں کی حد بندی کراکر دونوں جانب کے قبائل کو حد بندی معاہدہ پر عمل درآمد کو یقینی بنوائیں گے۔ دوروز میں ہونے والے مسلسل دوجرگوں میں یہ بھی اتفاق کیا گیا کہ ماضی میں ہونیوالی جنگجوانہ کارروائیوں میں دونوں جانب سے قتل ہونے والے مقتولین کے لواحقین میں بھی پنچائتی فیصلے کئے جائیں گے اور جب تک پنچائتی فیصلے نہیں ہوتے کوئی بھی قبیلہ نہ تو سیز فائر کی خلاف ورزی کرے گا اور نہ ہی متنازعہ زمینوں پر قبضہ کی کوشش کرے گا۔ بعد ازاں میر سرفراز خان بگٹی نے سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی خان گورچانی کے والد نواب پرویز اقبال خان گورچانی اور بھائی سردار شیر زمان خان گورچانی کے اعزاز میں اپنی رہائش گاہ ”بگٹی ہاؤس“میکنڑ بلوچستان میں پرتکلف عشا ئیہ بھی دیا۔ عشائیہ میں گورچانی قبائل کے وڈیروں ٗ مقدمین وڈیرہ میر ہزار خان نوکانی ٗ وڈیرہ محمد خان جلابانی ٗ ملک ذوہیب خان بکھر ٗ عنصر خان قصاب ٗ اور پنجاب سے صحافیوں ملک سجاد حسین ببر ٗ فاروق خان گوپانگ اور مرزا فرحان خان نے بھی شرکت کی۔ دریں اثناء سابق چیئر مین میونسپل کمیٹی حاجی محمد اکرم قریشی ٗ سابق یوسی چیئر مینوں سردار نذر خان رند ٗسردار منصور اختر خان لغاری ٗملک مرید حسین بکھر ٗ سردار غلام فرید خان پتافی ٗ سید محمد طارق شاہ ٗ سردار وسیم افضل خان لاشاری ٗمحمد فخر ڈھانڈلہ ٗ وڈیرہ میر ہزار خان نوکانی ٗ وڈیرہ رحیم بخش خان بازگیر ٗمرزا محمد ایوب خان ناصر ایڈووکیٹ ٗسردار محمد الیاس خان پتافی ٗ سابق چیئر مین مارکیٹ کمیٹی جام پور ملک کریم نواز آرائیں ٗ محسن رضا خان احمدانی ایڈووکیٹ ٗملک رشید احمد ببر ٗ ملک محمد فیاض ببر ٗ مقدم سردار اللہ یار خان کچھیلا ٗ سردار بلال خان لُنڈ ٗ ملک خلیل احمد سولہا ٗ ملک فدا حسین کھوکھر ٗ ملک بشیر احمد پرہار ٗسردار اللہ ڈیوایا خان کچھیلا ٗ سردار وزیر خان کچھیلا ٗ سردار محمد امین خان کچھیلا ٗ ملک غلام اکبر ببر ٗ میاں عمر ممتاز خواجہ ٗ میاں محمد احمد بودلہ ایڈووکیٹ ٗ سردار منصور خان مستوئی ایڈووکیٹ سمیت گورچانی گروپ کے رہنماؤں نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں پنجاب اور بلوچستان کے دوجنگجو قبائل میں سیز فائر کرانے پر نواب سردار پرویز اقبال خان گورچانی اور سابق وزیر داخلہ بلوچستان وسینیٹر میرسرفراز بگٹی کو زبردست خراج تحسین پیش کیا ہے۔ 

جرگہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...