بداخلاقی کے بعد 13 سالہ گھریلو ملازمہ قتل‘ مالک کا صلح کیلئے دباؤ‘ ورثا کا مظاہرہ

  بداخلاقی کے بعد 13 سالہ گھریلو ملازمہ قتل‘ مالک کا صلح کیلئے دباؤ‘ ورثا کا ...

رحیم یارخان(نمائندہ پاکستان)ظاہر پیر کے نواحی علاقہ کی 13سالہ گھریلوملازمہ کو مبینہ بداخلاقی کے بعد پھندا دیکرمالک نے لاش پنکھے سے لٹکادی، تفصیل کے مطابق تھانہ فیروز آباد ایسٹ کراچی کی حدود میں رحیم یارخان کے نواحی علاقہ ظاہرپیر موضع حبیب کوٹ کی رہائشی 13سالہ فضہ یاسین جو کہ کراچی میں میڈم سالکہ ذیشان کے گھر 13ہزار روپے ماہانہ پر ملازمت کرتی تھی 9اگست کو بیوی میڈم (بقیہ نمبر34صفحہ12پر)

سالکہ کی عدم موجودگی کافائدہ اٹھاتے ہوئے مالک ذیشان نے ملازمہ فضہ یاسین کو مبینہ بداخلاقی کانشانہ بناڈالااور گلے میں پھندا دیکر موت کے گھاٹ اتارکر لاش پنکھے لٹکادی تھی،ملزم ذیشان نے قتل کو خودکشی ظاہرکرنے کی کوشش کی، اطلاع پاکر پولیس نے لاش تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کردی تھی، والد کی رپورٹ پر پولیس تھانہ فیروزہ آباد ایسٹ کراچی نے ملزم ذیشان کے خلاف قتل کامقدمہ درج کرلیا تھا، بااثر ملزم سے پولیس نے ملی بھگت کرتے ہوئے انہیں ہراساں کرنا شروع کردیا، اور صلح کے لئے دباؤ دیاجارہاہے۔ ظاہرپیر کے علاقہ میں ورثاء نے احتجاج کرتے ہوئے وزیراعظم پاکستان عمران خان سے انصاف کے حصول کیلئے مطالبہ اور ملزم کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے۔

ملازمہ قتل

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...