گورنر خیبرپختونخوا کا وزیر صحت عاطف یوسفزئی کے ہمراہ صوابی کا دورہ

گورنر خیبرپختونخوا کا وزیر صحت عاطف یوسفزئی کے ہمراہ صوابی کا دورہ

صوابی( مانیٹرنگ ڈیسک)گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان نے گذشتہ رات صوبائی وزیر صحت محمد عاطف خان یوسفزئی کے ہمراہ صوابی کا اچانک دورہ کیا اس دوران انہوں نے ترکئی ہاؤس میں صوبائی وزیر بلدیات و دیہی ترقی شہرام خان کے ساتھ ملاقات کی۔ اس موقع پر صوبائی وزیر سیاحت محمد عاطف خان یوسفزئی، ایم پی اے محمد علی امیر اور بلند اقبال بھی موجود تھے۔ گورنر اور صوبائی وزراء نے(بقیہ نمبر15صفحہ12پر)

 ترکئی ہاؤس میں خوشگوار ماحول میں ملاقات کی اور مختصر قیام کے بعد واپس پشاور چلے گئے اس موقع پر گورنر شاہ فر مان نے میڈیا کے نمائندوں سے غیر رسمی گفتگو کر تے ہوئے واضح کر دیا کہ جب افغانستان میں قیام امن کے حوالے سے اگر سارے سٹیک ہولڈر ز اس بات کے اوپر متفق ہو جاتے ہیں کہ نہ صرف افغانستان اور پاکستان بلکہ پورے خطے کے اندر امن آجائے تو اس سے سارے خطے میں امن آنے سے سب کو فائدہ ہو گا جب افغانستان میں بد امنی ہو گی تو اس کے اثرات سارے خطے پر پڑینگے اور سب سے زیادہ نقصان پاکستان کو ہو گا پاکستان افغانستان میں امن کا خواہاں ہیں کیونکہ افغانستان میں امن ہو گا تو پاکستان سمیت پورے خطے میں خود بخود امن قائم ہو جائیگا انہوں نے کہا کہ افغانستان میں امن سب کے مفاد میں ہے۔ہم امن کی خاطر مذاکرات کے حق میں ہیں کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ کے قرارداد اور کشمیری عوام کے امنگوں کے مطابق حل کرناضروری ہے۔ جب کشمیر کے اندر لڑائی شروع ہو گئی تھی اور کشمیر تقریباً آزاد ہو چکا تھا اس وقت انڈیاخود اقوام متحدہ گیاتھا جس پر اقوام متحدہ نے 47قرارداد پاس کی جس میں کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینے کا مطالبہ کیا گیا تھا اب کشمیر کے حوالے سے نہ بھارت اور نہ ہی پاکستان کوئی یکطرفہ فیصلہ کرسکتا ہے بلکہ یہ کشمیری عوام کا حق ہے وہ لوگ خوف فیصلہ کرینگے کہ وہ پاکستان یا پھر بھارت کے ساتھ الحاق کرنا چاہتے ہیں اب انڈیا اقوام متحدہ کے قوانین کی پاسداری کرے پاکستان اس کے لئے پہلے تیار ہے۔کشمیر کے مسئلے پر پوری قوم اور سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ کے قرادادوں کے مطابق حل کرنا ضروری ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...