سونیا مجیدانٹرنیشنل پیس ایوارڈحاصل کرنے والی پہلی پاکستانی گلوکارہ

  سونیا مجیدانٹرنیشنل پیس ایوارڈحاصل کرنے والی پہلی پاکستانی گلوکارہ

لاہور(فلم رپورٹر)دبئی میں مقیم پاکستانی گلوکارہ سونیا مجید اپنی شاندار گائیکی کی بدولت نہ صرف میوزک ورلڈ بلکہ دنیا بھر میں پاکستان کی پہچان بنی ہوئی ہیں۔وہ پہلی پاکستانی گلوکارہ ہیں جنہیں انٹرنیشنل پیس ایوارڈسے نوازا گیا، وہ متحدہ عرب امارات کی گلوبل گڈ ول ایمبسیڈر بھی ہیں۔ سونیا مجید نغمہ نگاری کے علاوہ موسیقاری میں بھی کمال مہارت رکھتی ہیں۔شاندار گلوکاری پرلاہور سے تعلق رکھنے والی اس گلوکارہ کو ”فلاور گرل“ کا خطاب مل چکا ہے۔

اپنی مدھر آواز کی بدولت سونیا مجید نے میوزک انڈسٹری میں بہت تیزی سے اپنا مقام بنایا ہے۔ان کی شناخت اگرچہ خود ان کی لوچ دار آواز ہے جوپوپ موسیقی، فوک اور میلوڈی نغمات کی بہترین ادائیگی میں ان کی مدد دیتی ہے۔ ساتھ ہی نغمہ نگار اور میوزک ترتیب دینے کا سہرا بھی اْن کو جاتا ہے۔ انہوں نے کئی نغمات کی دھن اور شاعری بھی خود ترتیب دی ہے۔یواے ای کی میوزک انڈسٹری میں سونیا مجید کی مدھر آواز کی بدولت انہیں ”امن کی آواز“ کے اعزاز سے نوازا گیا۔میوزک انڈسٹری کے ذریعے انہوں نے پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے دوستانہ و سفارتی تعلقات کو مزید مستحکم کرنے میں بھی فعال کردار ادا کیا۔گلوکارہ سونیا مجید کا کہنا ہے کہ خدا کا شکر ہے کہ مجھے عالمی سطح پر سراہا گیا، یو اے ای کی جانب سے مجھے ایمبسڈر مقرر کرنا میرے لئے اعزاز سے کم نہیں، میں اپنی گلوکاری کے ساتھ دنیا بھر میں امن محبت کیلئے اپنی خدمات پیش کرتی رہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ میں گزشتہ کئی سالوں سے میوزک سے وابستہ ہوں اپنے شوق سے جنون کی حد تک محبت ہے۔

مزید : کلچر


loading...