بھارتی ایئر لائنز کیلئے فضائی حدود کی بندش زیر غور ہے:غلام سرور

  بھارتی ایئر لائنز کیلئے فضائی حدود کی بندش زیر غور ہے:غلام سرور

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،آئی ا ین پی) وفاقی وزیر برائے ہوابازی غلام سرور خان نے کہا ہے کہ بھارتی جارحیت کی وجہ سے بھارتی صدر کو پاکستانی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی، بھارت ابھی بھی کشمیر میں بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کر رہا ہے، کشمیر میں مودی حکومت کا رویہ قابل نفرت ہے۔وزیر ہوابازی غلام سرور خان نے بھارتی اخبار "دی ہندو" کو انٹرویو میں کہا کہ بوضہ کشمیر میں بھارت کی مسلسل جارحیت اور مظالم کے باعث بھارتی صدر رام ناتھ Kovind کو آئس لینڈ جانے کیلئے پاکستان کی فضائی حدود کے استعمال کی اجازت نہیں دی گئی، بھارت کو مزید رعایت نہیں دیں گے، تمام متعلقین سے بات کر کے فضائی حدود بھارتی صدر کے لیے بند کی، وی وی آئی پی کے علاوہ بھارتی ایئرلائنز کے لیے فضائی حدود بند کرنا بھی زیر غور ہے۔غلام سرور خان نے مزید کہا کہ ہم نے یوم دفاع کو یوم یکجہتی کشمیر کے طور پر منایا ہے، کرفیو کے ذریعے کشمیریوں کو ہر طرح کی بنیادی سہولیات سے روکا گیا ہے، ہم کیسے یہ سب کچھ برداشت کر سکتے ہیں، وفاقی کابینہ اور پارلیمنٹ بھی بھارت کو مزید رعایت دینے کے لیے راضی نہیں ہے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ جولائی میں پاکستان نے خیر سگالی کے جذبے کے تحت فضائی حدود کو کھولا مگر بھارت نے اس کو ہماری کمزوری سمجھا، بھارتی رویہ قطعی طور پر ناقابل برداشت ہے۔غلام سرور خان نے کہا کہ بھارت وزیراعظم نریندرمودی کو گزشتہ ماہ اگست میں فرانس کے ان کے دورے کے دوران جذبہ خیر سگالی کے طورپر پاکستانی کی فضائی حدود کے استعمال کی اجازت دی گئی تھی لیکن اس کے باوجود بھارت کے بین الاقوامی قوانین کی مسلسل خلاف ورزی کی روش اختیار کررکھی ہے۔

غلام سرور

مزید : صفحہ اول


loading...