ایران میں یورینیم افزدوگی کیلئے جدید تیز تر سینٹری فیو جز کا استعمال شروع

ایران میں یورینیم افزدوگی کیلئے جدید تیز تر سینٹری فیو جز کا استعمال شروع

تہرا ن (آ ئی این پی)ایرانی جوہری توانائی ایجنسی کے ترجمان بہروز کمال وندی نے کہا ہے کہ ایران نے یورینیم افزودگی کے لئے جدید ترین سینٹری فیوجز کا استعمال شروع کردیا ہے۔چا ئنہ ریڈ یو انٹر نیشنل کے مطا بق انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ اس وقت ایسے 40 جدید سینٹری فیوجز کام کر رہے ہیں، جنہیں یورینیم افزودگی، ریکٹر فیول اور جوہری ہتھیاروں کی تیاری کے لیے استعمال بھی کرسکتے ہیں۔ بہروز کمالوندی کا یہ بھی کہنا تھا کہ جدید سینٹری فیوجز کے استعمال سے ایران 20 فیصد سے زائد یورینیم افزودہ کر سکتا ہے، یورپی ساتھیوں کو معلوم ہونا چاہیے کہ جوہری معاہدے کو بچانے کے لیے اب ان کے پاس زیادہ وقت نہیں رہ گیا۔ایران کے اس اقدام کے اعلان کے بعد، روس، برطانیہ، فرانس اور امریکہ نے سات تاریخ کو جاری اپنے اپنے بیانات میں تشویش کا اظہار کیا ہے۔آئی اے ای اے کے قائم مقام ڈائریکٹر جنرل، کارنیل فرروٹا موجودہ صورت حال کے تناظر میں سینئر ایرانی عہدیداروں سے ملاقات کے لئے رواں ماہ کی 8 تاریخ کو تہران کا دورہ کریں گے۔واضح رہے کہ جوہری معاہدے کے تحت ایران صرف 3 فیصد سے زائد تک یورینیم افزودہ کرنے کا پابند تھا۔

مزید : عالمی منظر


loading...