ملزمان سے اب تک 23ارب سے زائد کی رقم وصول کی جا چکی: نیب

  ملزمان سے اب تک 23ارب سے زائد کی رقم وصول کی جا چکی: نیب

  

 اسلام آباد (این این آئی)قومی احتساب بیورو (نیب)جعلی اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لئے پرعزم ہے اور ملزمان سے اب تک 23 ارب سے زائد کی رقم وصول کی جاچکی ہے۔تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو (نیب)نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں پیش رفت اور رقم موصول ہونے سے متعلق رپورٹ جاری کردی ہے جس میں بتایا گیا کہ جعلی اکاؤنٹ کے 43کل کیسز ہیں جن میں سے اب تک دس ریفرنسز احتساب عدالتوں میں دائر کئے جا چکے ہیں جبکہ 12کیسز انویسٹی گیشن کے مرحلے میں اور 21کیسز پر انکوائری جاری ہے رپورٹ میں بتایا گیا کہ نیب راولپنڈی نے سابق صدر آصف علی زرداری، فریال تالپور، امنی گروپ، بلال شیخ، حسین لوائی سمیت 52ملزمان کو گرفتار کیا جبکہ پلی بارگین اور اراضی کی مد میں اب تک نیب راولپنڈی نے 23ارب سے زائد کی رقم وصول کی جا چکی ہے نیب کے مطابق جعلی اکاؤنٹس کیس کل 64ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے گئے جن میں سے 12ملزمان بھاگے ہوئے ہیں جنہیں اشتہاری قرار دیدیا گیا ہے جبکہ 18ملزمان کو پلی بار گین قوانین کے تحت سزائیں دی گئی ہیں یعنی وہ دس سال تک کسی سرکاری عہدے کے لئے اہل نہیں ہوں گے رپورٹ کے مطابق آصف علی زرداری، نواز شریف، یوسف رضا گیلانی فریال تالپوراور خواجہ انور مجید سمیت 186 ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالے جا چکے ہیں جبکہ سابق صدر آصف علی زرداری 4 کیسز میں ملزم نواز شریف 1 کیس، یوسف رضا گیلانی 1 کیس، فریال تالپور1 کیس اور خواجہ انور مجید(امنی گروپ) 9 کیسوں میں ملزم نامزد کیے گئے ہیں نیب کی رپورٹ میں کہا گیا ہسپتالوں سے ملزمان کی عدالتوں میں پیشیاں یقینی بنانے سے لے کر ملزمان کو بیرون ملک سے واپس لانے کے لیے نیب پر عزم نظر آتا ہے، وعدہ معاف گواہان بننے سے لے کر مختلف اداروں سے ریکارڈ موصول ہونے کا سلسلہ بھی جاری ہے اور جلد مزید ریفرنسز فائل کئے جائیں گے۔

نیب رپورٹ

مزید :

صفحہ آخر -