ٹانک،جنوبی وزیر ستان شکتوئی واقعہ پر مین شاہراہ پر احتجاجی دھرنا 

ٹانک،جنوبی وزیر ستان شکتوئی واقعہ پر مین شاہراہ پر احتجاجی دھرنا 

  

ٹانک(نمائندہ خصوصی)جنوبی وزیرستان شکتوئی واقع پر مظاہرین کا جنوبی وزیرستان سے شمالی وزیرستان کو جانے والی مین شاہراہ پر گزشتہ شام سے دھرنا جاری، روڈ ہر قسم ٹریفک کیلئے بند، عوام کو شدید مشکلات کا سامنا تفصیلات کے مطابق آج بروز منگل گزشتہ دنوں جنوبی وزیرستان کا دور افتادہ علاقہ شکتوئی میں سیکورٹی فورسز کے قافلے پر بم حملے کے نتیجے میں جسمیں متعدد جوان زخمی ہوگئے تھے کے بعد سیکیورٹی فورسز کا سرچ آپریشن کے دوران گرفتاریوں اور تشدد کے واقعات پر علاقہ شکتوئی سے تعلق رکھنے والے سنکڑوں افراد نے شمالی اور جنوبی وزیرستان کے درمیانی علاقہ احسان شہید پل پر سنکڑوں افراد کا گزشتہ شام سے احتجاجی دھرنا جاری ہے جس کے باعث جنوبی وزیرستان سے شمالی وزیرستان کے راستے پشاور جانے والا شاہراہ مکمل طور پر بند ہوگیا ہے جس سے عوام کو امد رفت میں شدید مشکلات کا سامنا ہے، رزمک پولیس حکام نے شنڈوری گیٹ کے قریب کنٹینر لگا کر ہر قسم ٹریفک کیلئے روڈ بند کر دیا ہے، روڈ بندش کے متعلق  رزمک پولیس کے ڈی ایس پی حمید اللہ اور ایس ایچ او لوئی دراز  نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈپٹی کمشنر قبائلی ضلع شمالی وزیرستان نے ضلع بھر میں دفعہ ایک سو چوالیس نافذ کردیا ہے، جس کے باعث ضلع بھر میں ہر قسم کے جلسے جلوسوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے، ان کا کہنا تھا کہ ہم عوام کی زندگیوں کو محفوظ بنانے کیلئے ضروری اقدامات اٹھارہے ہیں تاکہ کوئی ناخوشگوار صورتحال پیدا  نہ ہوں، تاہم دونوں ضلعی انتظامیہ کے زمداروں نے تاحال احتجاجی دھرنا دینے والوں کے ساتھ مذاکرات کا سلسلہ شروع نہیں کیا ہے جس سے متاثرہ لوگوں میں اشتعال پھیل رہا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -