مہمند،سانحہ زیارت ماربل میں جاں بحق افراد کی تعداد21 ہوگئی

  مہمند،سانحہ زیارت ماربل میں جاں بحق افراد کی تعداد21 ہوگئی

  

 مہمند(نمائندہ پاکستان)سانحہ زیارت ماربل میں جان بحق افراد کی تعداد21 ہوگئی،واقعہ میں 9 زخمی افراد مختلف ہسپتالوں کو منتقل۔المناک سانحہ سے علاقہ کا فضاء سوگوار رہا۔زیارت خوڑ میں مقامی جان بحق 6  افراد کی اجتماعی نماز جنازہ ادا کی گئی۔جان بحق افراد میں تاحال 2 افراد کی شناخت نہ ہو سکا۔ واقعہ میں دوسری علاقوں افراد کی لاشیں اپنے گھروں کو پہنچا دی گئے۔ملبہ ہٹانے میں ریسکیو1122،پاک فوج اور فرنٹئیر کور کے جوان، الخدمت،مقامی پولیس، اور ٹھیکیداروں کی مشنریاں مصروف عمل۔گزشتہ رات کو ضلع پشاور اور دوسرے اضلاع سے مزید ریسکیو1122 ٹیمیں مشینریوں سمیت طلب۔ملبہ ہٹانے میں ایک ہفتہ سے ذیادہ وقت لگ سکتا ہے۔ملبہ میں مزید آٹھ افراد دب جانے کا خدشہ۔ذرائع تفصیلات کے مطابق گزشہ پیرکے روز پانچ بجے کے قریب تحصیل صافی میں واقع مشہور زیارت ماربل کے پہاڑی تودہ کانوں پر بھاری مقدار میں آگرا۔جس نے ماربل کانوں کے ساتھ ساتھ پہاڑ کا ذیلی حصہ بھی اپنے لپیٹ میں لے لیا۔واقعہ کے اطلاع پر مختلف محکمے موقع پر پہنچ گئے۔جن میں ریسکیو1122 سمیت مختلف محکمے اورمقامی لوگوں نے رات بارہ بجے تک 14 لاشوں سمیت9 زخمی افراد نکالی۔سانحہ  میں زخمی افراد کو مختلف ہسپتالوں کو منتقل کردیا۔جبکہ صبح سے ملبہ ہٹانے کے آپریشن میں مزید 7 لاشیں برآمد کرلی۔اور مذکورہ علاقہ فرنٹئیر کور کے جوانوں نے اپنے قبضے میں لے لیا۔کیونکہ واقعہ کے بعد بھی دو دفعہ مزید چھوٹے پیمانے پر پہاڑی تودے گرے۔مقامی لوگوں کے مطابق ملبہ ہٹانے کے لئے موجودہ مشینری ناکافی ہیں۔جن سے ملبہ ہٹانے میں ایک ہفتہ سے ذیادہ وقت لگ سکتا ہے۔علاقے کے عوام نے ملبہ ہٹانے اور لاشوں کو نکالنے میں پاک فوج سے مزید کردار ادا کرنے کی اپیل کی ہیں۔سانحہ زیارت کے المناک واقعے سے علاقے کا فضاء سوگوار رہا۔جبکہ آئی جی ایف سی،ڈائیریکٹر منرل مائنز،کمشنر پشاوراور کمانڈنٹ مہمندرائفلز سمیت دوسرے سیاسی رہنماوں نے مذکورہ علاقے کا دورہ کیا۔اورملبہ ہٹانے کے اپریشن کا جائزہ لیا اورواقعہ پر افسوس کا اظہار کیں۔سانحہ زیارت ماربل میں جاں بحق اور متاثرہ افراد میں ذیادہ تر محنت کش،ڈرائیور،کنڈیکٹر ماربل کے چھوٹے تاجر اور ٹھیکیداروں کے منشی حضرات شامل ہیں۔سانحہ میں جان بحق افراد میں گلفام ولد اصیل خان،امجد ولد شیر ذادہ،طارق ولد سید خان،کاشف ولد لعل زمان،محمد خان ولد لعل محمد،سکنہ تحصیل پنڈیالی جبکہ طالب ولد سوتر، فیاض ولد شیر جان، حکم ولد سوتر،الیاس ولد بخت ذادہ،روح اللہ ولدشیر بہادر،کلیم اللہ ولد نظر محمد،علمگیر ولد ظاہر اللہ، رحیم اللہ ولد فضل حالق،وحید ولد میر ذادہ سکنہ تحصیل  صافی۔یاسین ولد بشیر اور عابد ولد خائستہ رحمان تحصیل امبارجبکہ زخمیوں میں مثل خان ولد امام دین،عدالت ولد توکل،عادل ولد خائستہ رحمان،نیک محمد ولد تاجمیر،صالح محمد ولد خان باد شاہ سکنہ تحصیل پنڈیالی،شہزادہ ولد محمد حکیم ملاگوری خیبر،اسرار ولد جمشیدصافی اور شہسوار ولدراج ولی امبار شامل ہیں۔جبکہ باقی افراد کی شناخت تاحال نہ ہوسکی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -