اسرائیلی مرکزی بینک کے سربراہ کی قیادت میں وفد کا دورہ متحدہ عرب امارات

  اسرائیلی مرکزی بینک کے سربراہ کی قیادت میں وفد کا دورہ متحدہ عرب امارات

  

   دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیل کے سب سے بڑے بینک کے سربراہ کی قیادت میں کاروباری افراد کا وفد تجارتی تعلقات قائم کرنے کے لیے متحدہ عرب امارات پہنچ گیا۔خبر ایجنسی 'اے ایف پی' کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی بینک کے سربراہ نے متحدہ عرب امارات کے پہلے کاروباری دورے کو مستقبل میں وسیع توقعات کے لیے پہلا قدم اور سنگ میل قرار دیا۔انہوں نے نجی طیارے میں دبئی روانگی سے قبل میڈیا کو بتایا کہ 'ہمیں یقین ہے کہ بینکوں کے سربراہوں اور معاشی ماہرین کے درمیان براہ راست اور نفیس رابطوں سے براہ راست کاروبار کی راہ ہموار ہوگی'۔ان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے باعث دنیا میں بھر میں آنے والی معاشی سست روی کے پیش نظر وفد کو نئے راستوں کی تلاش ہے۔اسرائیلی بینک کے ترجمان کا کہنا تھا کہ دو روزہ دورے کے پہلے مرحلے میں وفد دبئی میں بینکاروں اور کاروباری شخصیات سے ملاقاتیں کرے گا، جس کے بعد ابوظہبی جائے گا۔رپورٹ کے مطابق اسرائیل کے بینک لیومی کے سربراہ کی قیادت میں ایک اور وفد 14 ستمبر کو متحدہ عرب امارات کا دورہ کرے گا۔اسرائیلی حکومت کے عہدیدار کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات کے وفد کو بھی حکومت کی جانب سے دورے کی دعوت دی گئی ہے، تاہم فی الحال کوئی تاریخ طے نہیں ہوئی۔متحدہ عرب امارات نے گزشتہ ماہ اسرائیل کے ساتھ تعلقات قائم کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد اسرائیل سے تعلقات رکھنے والا خلیج میں پہلا اور تیسرا عرب ملک بن گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات

مزید :

صفحہ اول -