نشتر ہسپتال، سائیکل، موٹر سائیکل سٹینڈ  کا ٹھیکہ من پسند شخص کو دینے پر سائل  نے عدالت کا سہارا لے لیا،ہائیکورٹ کا  قانون کے مطابق فیصلہ کرنیکا حکم

  نشتر ہسپتال، سائیکل، موٹر سائیکل سٹینڈ  کا ٹھیکہ من پسند شخص کو دینے پر ...

  

 ملتان (خصو صی رپورٹر)ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج جسٹس مزمل اختر شبیر نے نشتر ھسپتال اور میڈیکل یونیورسٹی میں سائیکل(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

 اور موٹر سائیکل اسٹینڈ کا ٹھیکہ قانون اور قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اپنے من پسند شخص کو الاٹ کرنے اور ادارے کو 20 لاکھ روپے کا نقصان پہنچانے سے متعلق درخواست میڈیکل سپرنٹنڈنٹ نشتر ہسپتال کو بھجواتے ہوئے پٹیشنر کو ذاتی طور پر سماعت کر کے قانون کے مطابق فیصلہ کرنے کا حکم دیا ہے۔فاضل عدالت میں شہزاد قیوم نے کونسل چوہدری طاہر محمود کے ذریعے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ سائیکل اور موٹر سائیکل اسٹینڈ کے کے لئے ایک کروڑ ستر لاکھ روپے کی پیشکش کی مگر نشتر کی انتظامیہ نے ملی بھگت کرکے یہ ٹھیکہ ملی بھگت کرکے اپنے من پسند شخص کو ڈیڑھ کروڑ روپے میں دے کر ادارے کو 20 لاکھ روپے کا نقصان بھی پہنچایا اور قوانین کی خلاف ورزی بھی کی۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ ہسپتال کے کینٹین کے ٹھیکے میڈیکل سپریٹنڈنٹ نے الاٹ کیے جبکہ اسٹینڈ کا ٹھیکہ اے ایم ایس اے نے اپنے من پسند شخص کو الاٹ کرکے دوسرے لوگوں کی حق تلفی کی ہے۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -