چوک کچہری ملتان، سرائیکی پارٹی کا الگ صوبے کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  چوک کچہری ملتان، سرائیکی پارٹی کا الگ صوبے کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  

 ملتان (سٹی رپورٹر)سول سیکرٹریٹ نہیں صوبہ چاہئے۔ ہمارا نعرہ ”صوبہ سرائیکستان دارالحکومت ملتان“ ہے، عمران خان، مخدوم شاہ محمود قریشی اور عثمان بزدار کا یہ کہنا غلط ہے کہ سول سیکرٹریٹ بنا کر وعدہ پورا کر دیا، ہم واضح کرتے ہیں کہ سول سیکرٹریٹ نہیں صوبے کا (بقیہ نمبر21صفحہ6پر)

وعدہ ہوا تھا۔ وسیب کے لوگوں کو بے وقوف نہ سمجھا جائے اور وسیب سے مذاق بند کیا جائے کہ وسیب کے لوگ الگ ملک نہیں صوبہ مانگ رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکی رہنماؤں ملک اللہ نواز وینس، ظہور دھریجہ، مہر مظہر کات، ملک نعیم اقبال ایڈووکیٹ، ملک جاوید چنڑ ایڈووکیٹ، نوشین خان بلوچ ایڈووکیٹ، عبدالباری جعفری، ساجد رحمن ایڈووکیٹ، رانا نعمان نون نے سرائیکی جماعتوں کی طرف سے چوک کچہری ملتان میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ یہ مظاہرہ پاکستان سرائیکی پارٹی کی طرف سے ہوا، سرائیکستان قومی کونسل، سرائیکستان ڈیموکریٹک پارٹی اور سرائیکستان نوجوان تحریک نے شرکت کی۔ احتجاجی مظاہرے میں حمید خان بلوچ، جاوید اقبال خان لنگاہ، حسن مشتاق خان کھوسہ، غلام مصطفی بھٹی، ملک یعقوب وینس، رضوان بھٹی، ملک سلیم، ایم اشفاق خان، لالہ شیراز، علی گوہر، رانا نعمان نون، زبیر دھریجہ، جامی صابری،سانول اعوان، اجمل دھریجہ، افضال بٹ، مہر مشتاق، ارشد نور پوری، رئیس ثقلین کھوکھر، رئیس عبدالرحمان کھوکھر و دیگر شامل تھے۔ اس موقع پر زبردست نعرے بازی کی گئی ”۔ اس موقع پر سرائیکی رہنماؤ ں نے کہا کہ کہا کہ وسیب میں تفریق پیدا کرنے والے سول سیکرٹریٹ کے سازشی منصوبے کو مسترد کرتے ہیں۔ وسیب 11 اضلاع نہیں 23 اضلاع پر مشتمل ہے۔حکومت سول سیکرٹریٹ کے نام پر صوبے کا مقدمہ خراب رہی ہے اور وسیب کے خلاف لڑاؤ اور حکومت کرو جیسے استعماری حربے استعمال کئے جا رہے ہیں، جن کے خلاف ہم احتجاج کریں گے، دھرنے دیں گے اور لانگ مارچ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سول سیکرٹریٹ نہیں صوبہ چاہئے۔ سول سیکرٹریٹ صوبے کا متبادل نہیں، ہم واضح کرنا چاہتے ہیں کہ سول سیکرٹریٹ کا نہیں صوبے کا وعدہ ہوا تھا۔ تحریک انصاف کی طرف سے الیکشن کمپین سول سیکرٹریٹ نہیں بلکہ صوبے کے نام پر چلائی گئی تھی اور صوبہ محاذ کا عمران خان سے تحریری معاہدہ صوبے کا تھا نہ کہ سول سیکرٹریٹ کا۔سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ وسیب کی مکمل حدود اور شناخت کے مطابق صوبہ بنایا جائے۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ حکومت وسیب کے کروڑوں افراد سے مذاق بند کرے، ملتان بہاولپور کے نام پر وسیب تقسیم قبول نہیں، ہم وسیب کی یکجہتی کی بات کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم خیرات نہیں اپنا حق مانگتے ہیں۔سرائیکی وسیب کے لوگوں کو صوبہ اور شناخت چاہئے۔

احتجاجی مظاہرہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -