محکمہ صحت، بدعنوانی، افسروں  واکاؤنٹنٹ کیخلاف فوری انکوائری کاحکم

  محکمہ صحت، بدعنوانی، افسروں  واکاؤنٹنٹ کیخلاف فوری انکوائری کاحکم

  

 ملتان (وقا ئع نگار)چیف ایگزیکٹو آفیسر ہیلتھ ملتان نے محکمہ صحت (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

افسروں و اکاونٹنٹ کیخلاف بدعنوانی کے الزامات کے تحت انکوائری کا حکم دیا ہے۔چیف ایگزیکٹو آفیسر ہیلتھ ملتان کو نیو ملتان کے رہائشی شریف انصاری نے درخواست دی تھی کہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے اکاونٹنٹ ثمر عباس کو انکے کزن نائب قاصد محمد صادق بنیادی مرکز صحت عنایت پور نے 31 جولائی 2020ء کو ریٹائرمنٹ کی درخواست دی۔مگر اس پر کوئی پیشرفت نہ کی گئی۔بلکہ 31 اگست 2020ء  کو دوبارہ درخواست دینے کا کہا گیا۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ ریٹائرمنٹ اور 5 ویں سکیل میں ترقی کے لئے 5،5 ہزار روپے،پنشن کے لئے 20 ہزار روپے اور دیگر کاموں کے لئے بھی ہزاروں روپے رشوت کا ریٹ مقرر ہے۔ثمر عباس جعلی ادویات کی خریداری،جعلی بلوں کی تیاری میں بھی لاکھوں روپے کی بدعنوانی میں ملوث ہے۔ضلع کے بنیادی مراکز صحت پر ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ڈیرہ غازی خان کی مہر لگی ادویات فراہم کی گئی ہیں۔جو کسی بھی طور ممکن نہیں۔اور غیر قانونی ہے۔ان الزامات پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر اور ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرز کو انکوائری آفیسر مقرر کیا گیا ہے۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -