عبدالمجید اچکرزئی کی رہائی، محکمہ پولیس کی  جانب سے فیصلے کیخلاف اپیل دائر کرنیکی  تیاریاں، چیف جسٹس میرے والد کے قاتل  کو سزا دیکر ہمیں انصاف فراہم کریں،  کانسٹیبل کے بیٹے معظم عطاء کی بات چیت

  عبدالمجید اچکرزئی کی رہائی، محکمہ پولیس کی  جانب سے فیصلے کیخلاف اپیل دائر ...

  

 وہوا(نمائندہ پاکستان) عبدالمجید اچکزئی کی رہائی کے فیصلہ سے تمام گھر والے ابھی تک سکتہ کی سی حالت میں ہیں سپریم کورٹ کے چیف جسٹس ہمارے والد کے قاتل کو(بقیہ نمبر15صفحہ6پر)

 عبرتناک سزا دے کر ہمیں انصاف فراہم کریں یہ بات جی پی او چوک کوئٹہ میں 2017ء  میں عبدالمجید اچکزئی کی گاڑی تلے کچلے جانے والے وہوا کے رہائشی ٹریفک پولیس اہلکار عطاء  اللہ کے بیٹے معظم عطاء  نے کہی انہوں نے کہا کہ تین سال قبل عبدالمجید اچکزئی نے بے دردی سے میرے والد عطاء  اللہ کو جو کہ اپنی ڈیوٹی سر انجام دے رہے تھے کو اپنی گاڑی تلے کچل ڈالا جس کی سی سی ٹی وی فوٹیج سوشل میڈیا پر پوری دنیا نے دیکھی جو کہ ملزم کے جرم کا جیتا جاگتا ثبوت تھا مگر چند روز قبل عدالت کی جانب سے بااثر ملزم عبدالمجید اچکزئی کو عدم ثبوت کی بناء  پر بے گناہ قرار دے دیا گیا اس فیصلہ سے ہمارے گھر پر قیامت ٹوٹ پڑی ہے کیا واقعہ کی ویڈیو سیبڑھ کر اور بھی کوئی ثبوت جرم کو ثابت کرنے کے لیے ہوسکتا ہے انہوں نے کہا کہ محکمہ پولیس کی جانب سے عدالت کے اس فیصلہ کے خلاف اپیل دائر کی جارہی ہے اور ہمیں امید ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان میرے والد کے قاتل کو قرار واقعی سزا دے کر ہمیں انصاف فراہم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں گے۔

رہائی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -