گستاخ عناصر فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو نقصان پہنچا رہے ہیں، حنیف جالندھری

گستاخ عناصر فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو نقصان پہنچا رہے ہیں، حنیف جالندھری

  

 ملتان (سٹی رپورٹر)قادیانیوں کو مسلسل اور بھاری مقدار میں فنڈنگ جانا تشویش ناک عمل ہے۔ ملک میں کالعدم تنظیموں کو فنڈنگ کرنا جرم ہے تو قادیانی جوبقول مصور پاکستان علامہ محمد اقبال ملک وملت دونوں کے غدار ہیں، ان کو فنڈنگ کرنے کی کیوں کر اجازت ہوسکتی (بقیہ نمبر1صفحہ6پر)

ہے۔ ان خیالات کا اظہارعالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے رہنماؤں مولانا عزیز الرحمن جالندھری، مولانا اللہ وسایا، مولانا محمد اکرم طوفانی،مولانا محمد اسماعیل شجاع آبادی، مولانا مفتی راشد مدنی، مولانا عزیز الرحمن ثانی،مولانا قاضی احسان احمد، مولانا عبدالنعیم، مولانا محمد وسیم اسلم اور حافظ محمدانس نے اپنے مشترکہ بیان میں کیا۔ عقیدہ ختم نبوت ایمان کا بنیادی اور اہم ترین جزو ہے اس کا تحفظ کرنا ہر مسلمان کی اولین ذمہ داری ہے۔ ختم نبوت تکمیل رسالت کا نام ہے، حضور علیہ السلام کے بعد کوئی نبی نہیں آسکتا، 1974ء میں جملہ اکابر کی کاوشوں سے آئین میں ترمیم کر کے منکرین ختم نبوت کو اقلیت میں شامل کیا گیا، اس جدوجہد میں ہزاروں مسلمانوں کا خون شامل تھا، ان قربانیوں کو کبھی رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا، حکمرانوں نے مغربی دباؤ پر قانون ناموس رسالت اور قانون ختم نبوت ختم کرنے کی کوشش کی تو مسلمان انہیں اسلام آباد سے اٹھا کر سمندر میں پھینک دیں گے، قادیانیوں سے متعلق غیر ملکی رپورٹ جھوٹ کا پلندہ ہے، وزارت خارجہ اس کا جواب دے، ان خیالات کا اظہار وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے ناظم اعلیٰ اور اہل سنت اتحاد کے سر پرست مولانا محمد حنیف جالندھری نے اہل سنت اتحاد فورم (دیوبندی، بریلوی، اہلحدیث) کے زیر اہتمام شجاع آباد میں ختم نبوت وحرمت صحابہ ؓ واہلبیت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ صحابہ کرام اہل اسلام کے ایمان کی اساس ہیں، جن کی توہین ناقابل برداشت ہے، انہوں نے کہا کہ مقدس ہستیویوں کی توہین سے ملک میں فسادات کا خطرہ ہے، گستاخی کرنے والے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو نقصان پہنچا رہے ہیں، انہوں نے کہا مقدس ہستیویوں کی  توہین کا ارتکاب کرنے والوں سے ان کے مسلک کے ذمہ داران اپنے مراجع کے فتوی کے مطابق اظہار برأت کریں، ورنہ صحابہ کرام اور مقدس شخصیات کے متعلق اپنی پوزیشن واضح کریں،امن کے لیے قربانی دینے کو تیار ہیں، لیکن امن کے لیے ایمان کی قربانی نہیں دے سکتے، حکومت ہوش کے ناخن لے اور گستاخان صحابہ کو کیفر کردار تک پہنچائے۔ جماعت اہل سنت کے پنجاب کے ناظم اور اہل سنت اتحاد کے کنوینئر مولانا محمد فاروق خان سعیدی نے اپنے خطاب میں کہا کہ ختم نبوت ناموس صحابہ ہر مسلمان کی آواز ہے، جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا، وقت آگیا ہے کہ امت ختم نبوت، ناموس رسالت اور ناموس صحابہ و اہلبیت کے لیے متحد ہو جائے، انہوں نے کہا کہ چودہ صدیاں گزرنے کے بعد خلفاء راشدین کے ایمان پر بحث شرمناک ہے، حکومت خاموش تماشائی نہ بنے۔ وفاق المدارس العربیہ پاکستان جنوبی پنجاب کے ناظم اور اہل سنت اتحاد کے رابطہ سیکرٹری مولانا زبیراحمد صدیقیؔ نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستان، ختم نبوت اور صحابہ کرام لازم ملزوم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک جانب اتحاد کا نعرہ اور دوسری جانب امت کے متفقہ اکابر کو سب وشتم کی منطق سمجھ سے بالاتر ہے، جمعیت اہل حدیث کے مرکزی راہنماء اور اہلسنت اتحاد کے ڈپٹی کنوینئر علامہ خالد محمود نے اپنے خطاب میں کہا کہ دنیا کی کوئی طاقت قانون ختم نبوت کو ختم نہیں کرسکتی، ہم عام مسلمان کی توہین برداشت نہیں کرتے حضرات صحابہ کرام کی توہین کیسے برداشت کرلیں۔جمعیت علماء پاکستان کے راہنماء محمد ایوب مغل نے ختم نبوت کے لیے قربانی دینے والے جانثاروں کو خراج عقیدت پیش کیا اور اکابرین کی بصیرت کو سراہا، انہوں نے کہا کہ ملتان سے اٹھنے والی ہر تحریک ملک بھر میں پھیل کر مقصد حاصل کرتی ہے، صحابہ کی حرمت کی تحریک بھی ملک بھرمیں چلائی جائیگی۔جماعت اسلامی جنوبی پنجاب کے نائب امیر میاں آصف محمود خوانی نے اہلسنت اتحاد کو سراہتے ہوئے ختم نبوت اور ناموس صحابہ کے قانون کو مؤثر بنانے پر زور دیا۔جمعیت علماء اسلام پنجاب کے نائب امیر مولانا ایاز الحق قاسمی نے اپنے خطاب میں کہا کہ موجودہ حکومت سے ختم نبوت کے قانون کو شدید خطرات لاحق ہیں، حکومت توہین صحابہ کرنے والوں کی پشت پناہی کر کے ملک کو فرقہ واریت میں دھکیلنا چاہتی ہے، عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مولانا قاسم رحمانی نے کہاکہ مقدس مشن کے لیے جان قربان کرنا سعادت سمجھتے ہیں، اہلسنت والجماعت کے مولانا امیر حمزہ نے کہا کہ دنیا نے دیکھا لیا ہے، فرقہ واریت کا ذمہ دار کون ہے، مجلس احرار اسلام کے راہنماء قاری جمیل الرحمن بہلوی نے کہا کہ جمعہ کے خطبات  میں مدح صحابہ کی احادیث بیان کی جائیں۔جامعہ فاروقیہ شجاع آباد کے نائب مہتمم مولانا مفتی محمد طیب معاویہ نے نقابت کے فرائض سرانجام دیے، جے یوپی کے صوبائی راہنماحاجی عاشق علی قادری مولانا احمد حنیف جالندھری، مفتی محمد عثمان جالندھری، جماعت اہلسنت کے راہنما محمد حسیب خان اظہری، سنی تحریک کے قاری محمدعرفان قادری، مرکزی میلادکونسل کے صدر مرزا محمد ارشد مولانا قاضی قمرالصالحین، مولانا محمد عمیر صدیقیؔ، خواجہ عبدالمالک صدیقیؔ، جمعیت اشاعت التوحید کے مولانا ہدایت اللہ نے جے ٹی آئی کے محمد زکریا خان نیبھی خطاب کیا۔کانفرنس میں ہر طبقہ فکر کے ہزاروں افراد نے شرکت کی، قائدین اسٹیج پر پہنچے تو اتحاد و اتفاق کا منظر دیکھ کر مجمع جذباتی ہوگیا اور قائدین نے ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کر اظہار یکجہتی کیا، درایں اثنا قائدین کی جانب سے انتظامی کمیٹی حاجی عاشق علی قادری، مفتی محمد طیب معاویہ اور خواجہ شبیر احمد کی کاوشوں کو سراہا گیا، کانفرنس کے موقع پر شہر بھر میں قائدین اور شرکاء کانفرنس کو بینروں کے ذریعے خوش آمدید کہا گیا، مذہبی تنظیموں، تاجر تنظیموں، وکلاء اور صحافی حضرات نے دو دن کے مختصر وقت میں شاندار کانفرنس کے انعقاد پر اتحاد کے رابطہ سیکرٹری مولانا زبیراحمد صدیقیؔ کو خراج تحسین پیش کیا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -