میرے رہنما، میرے رہبر

میرے رہنما، میرے رہبر
میرے رہنما، میرے رہبر

  

میرے خدا!

میرے رہنما، میرے رہبر

میرے با خبر ،میرے چارہ گر

میرے پاس آ ،میری بات سن

میری حالت ہے اب مضطرب

میری اذیتوں کا تسلسل توڑ دے

میرے دل کی گرہ کھول دے

تیری رحمت بے حساب ہے

مجھے ہدایت کی ہی  تلاش ہے

تیرا کرم آبِ رواں ہے

میرے عروج کو تو زوال ہے

میرے نصیب کو تو بدل دے

تو ہی رب ذوالجلال ہے

شاعرہ : حنا شہزادی

MerayRehnuma, Meray Dilbar

Meray Ba Khabr, Meray  Chaara Gar

Merasy Paas Aa , Meri Baat Sun

meri haalat Hay Ab Muztarb

Meri Azyyaton KaTasalsull Torr Day

Meray Dil Ki Giraah Khol Day

Teri Rehmat Behiaab Hay

Mujhay Hadaayat Ki Hi Talaash Hay

Tera Karam Aab e Rawaan Hay

Meray Urooj Ko Zawaal Day

Meray Naseeb Ko Tu Badal Day

Tu Hi Rabb e Zoljalaal Hay

Poetess: Hina Shehzadi

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -سنجیدہ شاعری -