سعودی عرب کا خواتین کے لئے قوانین نرم کرنے پر غور

سعودی عرب کا خواتین کے لئے قوانین نرم کرنے پر غور
سعودی عرب کا خواتین کے لئے قوانین نرم کرنے پر غور

  


ریاض (بیورو رپورٹ) سعودی عرب سرکاری سکولوں میں لڑکیوں کے کھیلوں پر عائد پابندی ہٹانے پر غور کر رہا ہے۔ ”الجزیزہ“ کے مطابق شوری کونسل نے تجویز دی ہے کہ سرکاری سکولوں میں عائد اس پابندی کو ہٹادیا جائے۔یا د رہے کہ نجی سکولوں کے لئے اس قانون میں گزشتہ سال مئی میں ہی نرمی کر دی گئی تھی۔ یہ بات واضح رہے کہ شوریٰ کونسل وزارت تعلیم کو صرف تجویز دے سکتی ہے حتمی فیصلے کا اختیار وزارت کو ہی حاصل ہے۔شوریٰ کونسل میں اس قانون کے مخالفین کی جانب سے مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ اس کا خاتمہ بچیوں میں مٹاپے کو کم کرنے میں مدد گار ہو گا۔ سعودی عرب میں خواتین کے حقوق کا معاملہ اکثر بین الاقوامی میڈیا میں موضوع بحث بنا رہتا ہے۔ اس سے قبل عورتوں کی جانب سے گاڑی چلانے پر پابندی کے قانون کیخلاف طرح طرح کے طریقے اپنا کر احتجاج کیا گیا لیکن مطالبات منوانے میں کامیابی حاصل نہ ہو سکی۔ تاثر یہی ہے کہ وقتاً فوقتاً ہونے والے احتجاج کے نتیجے میں اب سعودی عرب مختلف قوانین میں نرمی پر غور کر رہا ہے۔

مزید : انسانی حقوق


loading...