حکومت نے خصوصی بچوں کی سکریننگ کیلئے 276سکولوں میں کیمپ لگائے،عمران نذیر

حکومت نے خصوصی بچوں کی سکریننگ کیلئے 276سکولوں میں کیمپ لگائے،عمران نذیر

لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر برائے پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر خواجہ عمران نذیر نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت نے اسپیشل بچوں کی سکریننگ کے لیے صوبہ بھر میں اسپیشل بچوں کے276 اسکولوں میں سکریننگ کیمپس لگائے ہیں اور ان کیمپس میں ابھی تک 24500سے زائد بچوں کے بلڈ ٹیسٹ اور سکریننگ کی گئی ہیں۔انھوں نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ انٹیگریٹڈ سکریننگ کیپس کا انعقاد کیا گیا ہے جس کے بہترین نتائج سامنے آئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اسپیشل بچے نہ صرف والدین بلکہ حکومت کی جانب سے بھی خصوصی توجہ اور شفقت کے مستحق ہیں، ان سکریننگ کیمپس میں محکمہ پرائمری ایند سیکنڈری ہیلتھ نے ڈاکٹروں کی ا سپیشل ٹیمیں تعینات کی ہیں جو19 مارچ سے مرحلہ وار تمام اضلاع کے ان سکولوں میں اسپیشل بچوں کی سکریننگ کر رہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ لاہور میں اسپیشل بچوں کے کل21میں سے 13 سکولوں میں سکریننگ کا عمل مکمل کیا جا چکا ہے جن میں 1965بچوں کی سکریننگ کی گئی ہے جبکہ باقی سکولوں میں سکریننگ کا عمل جلد مکمل کر لیا جا ئے گا۔یہ بات خواجہ عمران نذیر نے گورنمنٹ سنٹرل ہائی سکول فار ڈیف گلبرگ میں اسپیشل بچوں کے لیے لگائے گئے سکریننگ کیمپ کا افتتاح کرتے ہوئے کہی۔تقریب میں ایڈیشنل سیکرٹری ہیلتھ ڈاکٹر عاصم الطاف،ڈپٹی سیکرٹری ڈاکٹر یداللہ، سی ای او ہیلتھ لاہور ڈاکٹر شہناز نسیم ،ڈی او سپیشل ایجوکیشن شہزاد ہارون بھٹہ اورڈائریکٹر سپورٹس اسپیشل ایجوکیشن سید کاظم شاہ نے شرکت کی۔ اس موقع پر صوبائی وزیر نے کہاکہ گذشتہ ڈیڑھ سال میں نہ صرف محکمہ صحت کے ملازمین،پیرامیڈیکل سٹاف،جینیٹوریل سٹاف بلکہ پنجاب پولیس اور قیدیوں کی بھی سکریننگ کی گئی ہیں۔اس طرح پنجا ب کے 36اضلاع کے مراکزصحت میں 15لاکھ سے زائد لوگوں کی سکریننگ کی ہے۔انھوں نے اسپیشل بچوں کے والدین سے اپیل کی کہ ان کیمپس سے مستفید ہوں

مزید : میٹروپولیٹن 1