طاہر بشیر چیمہ پیپلز پارٹی ،مسلم لیگ (ق) کے ٹکٹ پر بھی الیکشن لڑ چکے

طاہر بشیر چیمہ پیپلز پارٹی ،مسلم لیگ (ق) کے ٹکٹ پر بھی الیکشن لڑ چکے

بہاولپور (نصیراحمدناصرسے)طاہر بشیر چیمہ ایم این اے اور سمیع اللہ چوہدری سیکریٹری اطلاعات پنجاب مسلم لیگ ن و سابق صوبائی پارلیمانی سیکریٹری جنوبی پنجاب محاذ کا حصہ بن گئے۔واضح رہے طاہر بشیر چیمہ نے گزشتہ الیکشن مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر لڑا تھا اور ایم این اے منتخب ہوئے اس سے قبل وہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ق کے ٹکٹ پر بھی الیکشن لڑ چکے ہیں۔ مسلم لیگ ق کے ٹکٹ پر ایم این اے بھی منتخب ہوئے،جس کے بعد وہ مسلم لیگ ن میں شامل ہوگئے جس پر ان کے بڑے بھائی سابق ضلعی ناظم اور مرکزی سیکریٹری جنرل مسلم لیگ ق طارق بشیر چیمہ سخت نالاں ہوئے،بعد ازاں صلح ہوئی، طاہر بشیر چیمہ مسلم لیگ ن چھوڑ کر تحریک انصاف میں شامل ہوچکے ہیں آئندہ الیکشن وہ تحریک انصاف کے ٹکٹ پر لڑنے کا ارادہ رکھتے ہیں اور ٹکٹ لینے کی کوشش میں ہیں۔ سمیع اللہ چوہدری نے سیاسی زندگی کا آغاز طالب علمی کے دور میں کردیا تھا وہ ایم ایس ایف کے رہنما رہے، انہوں نے بلدیاتی الیکشن میں حصہ لیا اور میونسپل کارپوریشن کے کونسلر منتخب ہوئے جن دنوں شیخ رشید بہاولپور جیل میں بند تھے سمیع اللہ چوہدری نے ان سے اپنے روابط مضبوط کرلیے، مسلم لیگ کی مرکزی قیادت سے میل جول کے مواقع ملے،یہی وجہ تھی کہ وہ سید تابش الوری کے مقابلے میں ٹکٹ لینے میں کامیاب ہوگئے حالانکہ سید تابش الور ی نے 1993کی اسمبلی میں مسلم لیگ کے پلیٹ فارم پر بھرپور اپوزیشن کا رول ادا کیا تھا۔ اس کے باوجود سمیع اللہ چوہدری نہ صرف ٹکٹ لینے میں کامیاب ہوئے منتخب بھی ہوئے، پارلیمانی سیکریٹری بنے۔ بعد ازاں عدلیہ پر حملہ کرنے والوں میں شامل ہوگئے اور سزا پانے کے بعد نااہل قرار پائے،اس لیے ان کو ٹکٹ نہ مل سکا انہوں نے اپنی ہمشیرہ کو الیکشن لڑوایا۔ جب نااہلی کا طوق اترا تو پھر ن لیگ کی قیادت نے ان کو ٹکٹ نہ دیا کیونکہ مقامی طور پر مسلم لیگ ن اور جماعت اسلامی کے درمیان سیٹ ایڈجسٹمنٹ ہوگئی تھی، اس حلقہ سے ڈاکٹر سید وسیم اخترایم پی اے منتخب ہوئے،سمیع اللہ چوہدری سخت نالاں تھے انہوں نے ن لیگ کے ٹکٹ پر لڑنے والے امیدواران میاں بلیغ الرحمن اور ملک اقبال چنڑ کی مخالفت کی جس کی وجہ سے ان کے درمیان سرد جنگ جاری رہی۔اس بار بھی افواہیں گردش کررہی ہیں کہ صوبائی حلقہ کا ٹکٹ ان کو نہیں دیا جارہا۔جنوبی پنجاب محاذ میں شامل ہونے کے حوالے سے سمیع اللہ چوہدری سے بات ہوئی انہوں نے کہا کہ وہ ایک بڑے مقصد کے لیے اس محاذ کا حصہ بنے ہیں،جنوبی پنجاب کو صوبہ بننا چاہیے جبکہ بہاولپو رکو اس کا دارالخلافہ ہونا چاہیے انہوں نے کہا وہ مسلم لیگ ن نہیں چھوڑ رہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ جنوبی پنجاب صوبہ کے لیے تمام سیاسی جماعتوں سے رابطہ کریں گے،ان کو اس بارے آگاہ کیا جائے گا، اور ان کی حمایت حاصل کی جائے گی۔ واضح رہے کہ سمیع اللہ چوہدری کی اہلیہ مخصوص سیٹ پر ایم پی اے ہیں۔

طاہر بشیر چیمہ

مزید : صفحہ اول