چیچہ وطنی میں زیادتی کے بعد بچی کو جلائے جانے کے واقعہ کی تحقیقات کیلئے اعلی سطح کی کمیٹی تشکیل 

چیچہ وطنی میں زیادتی کے بعد بچی کو جلائے جانے کے واقعہ کی تحقیقات کیلئے اعلی ...
چیچہ وطنی میں زیادتی کے بعد بچی کو جلائے جانے کے واقعہ کی تحقیقات کیلئے اعلی سطح کی کمیٹی تشکیل 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی ہدایت پر چیچہ وطنی میں زیادتی کے بعد بچی کو جلائے جانے کے واقعہ کی تحقیقات کے لئے اعلی سطح کی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر چیچہ وطنی میں زیادتی کے بعد بچی کو جلائے جانے پر تحقیقاتی کمیٹی قائم کر دی گئی ہے ، آر پی او شیخوپورہ ذوالفقار حمید تحقیقاتی کمیٹی کے سربراہ جبکہ ایس ایس پی رینج انویسٹی گیشن گوجرانوالہ خالد بشیر چیمہ ، ایڈیشنل سیکرٹری(جوڈیشل) محکمہ داخلہ پنجاب اور پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کا نمائندہ کمیٹی کے ممبر ہوں گے ۔کمیٹی واقعہ کی ہر پہلو سے تحقیقات کر کے اپنی رپورٹ پیش کرے گی اور کمیٹی اس واقعہ کے حقائق کو منظر عام پر لائے گی۔واضح رہے کہ ساہیوال کی تحصیل چیچہ وطنی سے تعلق رکھنے والی آٹھ سالہ نور فاطمہ کو اتوار کو گھر کے قریب سے اغوا کیا گیا تھا جس کے بعد اس کے ساتھ مبینہ طور پر جنسی زیادتی کی گئی تھی جبکہ بعد ازاں ملزمان نے معصوم بچی کو جلانے کے بعد اس کے گھر کے نزدیک پھینک کر فرار ہوگئے تھے۔معصوم پری نور فاطمہ آج جناح ہسپتال لاہور میں دوران علاج دم توڑ گئی تھی۔ننھی نور فاطمہ سے زیادتی کے بعد زندہ جلانے کی خبر پورے شہر میں آگ کی طرح پھیل گئی  اور اس افسوسناک سانحے کے خلاف شہر بھر میں ہڑتال کی گئی ، پولیس نے آٹھ سالہ نور فاطمہ سے زیادتی کے واقعے کا مقدمہ درج کر کے ایک ملزم کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے تحقیقاتی کمیٹی بھی قائم کر دی ہے ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور