چینی کمپنی علی بابا کو اپنے ہی ملک میں اربوں ڈالر کا تاریخی جرمانہ، وجہ سامنے آگئی

چینی کمپنی علی بابا کو اپنے ہی ملک میں اربوں ڈالر کا تاریخی جرمانہ، وجہ سامنے ...
چینی کمپنی علی بابا کو اپنے ہی ملک میں اربوں ڈالر کا تاریخی جرمانہ، وجہ سامنے آگئی

  

بیجنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) چین کے کاروباری ریگولیٹر ادارے کی جانب سے آن لائن خرید و فروخت کے ادارے علی بابا پر ملکی تاریخ کا سب سے بڑا جرمانہ عائد کردیا۔

چینی ریگولیٹر کی جانب سے علی بابر کمپنی پر کاروبار کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کے الزامات کے تحت 18 ارب یو آن (2.75 ارب ڈالر) کا جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔ یہ ملکی تاریخ کا سب سے بڑا جرمانہ ہے جو چین کے اندر کسی کمپنی کو کیا گیا ہے۔

ریگولیٹر کی جانب سے علی بابا کے خلاف دسمبر 2020 میں تحقیقات شروع کی گئی تھیں جس میں یہ بات سامنے آئی کہ علی بابا کمپنی 2015 سے مارکیٹ کی ساکھ کی خلاف ورزی کر رہی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس علی بابا کمپنی کے بانی جیک ما نے چینی ریگولیٹر پر تنقید کی تھی جس کے بعد سے گروپ کے خلاف سکروٹنی میں تیزی آئی تھی۔ اس کے علاوہ جیک ما بھی کئی مہینے تک منظر عام سے غائب رہے تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -بزنس -