بھارت میں مسلمان رکشہ ڈرائیورنے نوٹوں سے بھرابیگ ملنے پرپولیس کے حوالے کردیا

بھارت میں مسلمان رکشہ ڈرائیورنے نوٹوں سے بھرابیگ ملنے پرپولیس کے حوالے کردیا
بھارت میں مسلمان رکشہ ڈرائیورنے نوٹوں سے بھرابیگ ملنے پرپولیس کے حوالے کردیا

  



جے پور(ڈی این اے) کم اجرت اور غربت انسان کو بہکانے میں زیادہ وقت نہیں لگاتی بالخصوص بھارت جیسے ملک میں جہاں ایک رکشہ چلانے والا بہت مشکل سے اپنا اوراپنے اہل خانہ کا گزر بسر کرتا ہو لیکن وہیں بھارتی شہر جے پور میں عابد قریشی نامی رکشہ ڈرائیورکو نوٹوں سے بھرا بیگ ملا جو اس نے پولیس کے حوالے کردیاجس پر مسلمانوں اور پاکستان پر تنقید کرنیوالی بھارتی پولیس بھی تعریف کرنے پر مجبو رہوگئی ۔

غیرملکی نشریاتی ادارے کے مطابق بھارتی ریاست راجھستان کے شہرجے پورکے علاقے چوڑا راستہ بازار میں عابد نامی شخص اپنا رکشہ چلا رہا تھا کہ اسے اچانک ایک نوٹوں سے بھرا بیک نظر آیا جس میں ایک لاکھ 17 ہزارروپے تھے، پیسے واپس کرنے کے لیے عابد قریشی نے 6 گھنٹے طویل انتظارکیا تاہم پیسے لینے کوئی نہیں آیا اور وہ بیگ لے کرگھر آگیا جہاں اسکی بیوی امینہ اور وہ بہت پریشان ہوئے تاہم دونوں نے مل کرفیصلہ کیا کہ یہ پیسہ انکا نہیں اورنوٹوں سے بھرابیگ بغیر کسی لالچ کے پولیس کے حوالے کردیا جس پرجے پورپولیس نے عابد اورانکی اہلیہ امینہ کی بہت تعریف کی۔

دوسری جانب عابد قریشی کا کہنا تھا کہ نوٹوں سے بھرا بیگ پولیس کو سپرد کرنے کے بعد انھیں بہت سکون ملا اورخوشی محسوس ہوئی کہ وہ بھٹکے نہیں جبکہ وہ کم اجرت پراپنی اہلیہ اور3 ماہ کی بچی کا پیٹ پال رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ انکی اہلیہ نے ان کی بہت ہمت بڑھائی اورباربار کہا کہ کسی اور کی دولت لینا گناہ ہے تاہم پولیس اب تک بیگ کے مالک کی کھوج لگانے میں مصروف ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...